یمن: الضالع صوبے میں اتحادی بم باری، متعدد حوثی باغی ہلاک اور زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن میں العربیہ کے ذرائع نے بتایا ہے کہ عرب اتحاد کے طیاروں نے الضالع صوبے میں قعطبہ شہر کے مغرب میں حوثی ملیشیا کے ایک مجمع کو بم باری کا نشانہ بنایا ہے۔

ذرائع کے مطابق بیت الشوکی کے علاقے میں ہونے والے کارروائی کے نتیجے میں ملیشیا کے متعدد ارکان ہلاک اور زخمی ہوئے۔ اس کے علاوہ عسکری گاڑیاں بھی تباہ ہو گئیں۔

ادھر قعطبہ کے شمال میں مریش کے علاقے میں یمنی فوج کی العمالقہ فورسز کے یونٹوں نے پہاڑی علاقے کے نزدیک حوثی ملیشیا کے ٹھکانوں اور کمک پر راکٹوں کے ذریعے بم باری کی۔ اس کے نتیجے میں ملیشیا کی عسکری گاڑیاں جل گئیں اور درجنوں باغی ہلاک اور زخمی ہوئے۔

عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے تعز صوبے کے جنوب میں واقع علاقے الاعبوس میں کیٹوشیا راکٹ داغنے کے پلیٹ فارم اور اور اڈے پر کئی حملے کیے۔ اسی علاقے میں کورنیٹ راکٹ داغے جانے کے لیے استعمال ہونے والے ایک پلیٹ فارم کو بھی نشانہ بنایا گیا۔ اس کے نتیجے میں پلیٹ فارم تباہ ہو گیا اور وہاں کام کرنے والے تمام حوثی مارے گئے۔

دوسری جانب صنعاء میں تعلیمی ذرائع نے بتایا ہے کہ حوثی ملیشیا اپنے ہمنوا طالب علموں کو لڑائی کے محاذوں پر موجود ہونے کے عوض اسکولوں اور ہائی اسکولوں میں امتیازی نمبروں سے نواز رہی ہے۔ حوثی ملیشیا نے اپنے پیروکار طلبہ کو پڑھائی میں شرکت اور حاضری کے بغیر امتحانی ہال میں داخلے کی اجازت دے دی۔ ان طلبہ کے پاس حوثی نگراں کی جانب سے جاری داخلے کا اجازت نامہ تھا۔

بعض اساتذہ اور ذمے داران کا کہنا ہے کہ حوثی ملیشیا فرضی نمبروں اور جعل سازی کے ذریعے طلبہ کو دھوکہ دے رہی ہے۔ ملیشیا نے جنگجوؤں کو علم کے حصول یا حاضری کے بغیر ہی امتحانی مرکز میں داخل ہونے کی اجازت دے دی۔

اساتذہ نے باور کرایا ہے کہ حوثیوں کے زیر قبضہ علاقوں میں تعلیم کا عمل غیر معمولی نوعیت کی تباہی سے دوچار ہو رہا ہے۔ حوثی ملیشیا منظم طریقے سے اسے برباد کر رہی ہے تا کہ اپنے درآمد شدہ ایجنڈے پر عمل درامد کی کوشش کر سکے۔ اس کا مقصد یمن کی سوچ اور شناخت کو ایران طرز فکر سے تبدیل کر دینا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں