قطر نے ایران کی مدد سے شام کی فضائی حدود استعمال کرنا شروع کر دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

قطر نے چار عرب ممالک کی طرف سے اپنی فضائی حدود کے استعمال پر پابندی کے بعد ایران کی مدد سے شام کی فضائی حدود کے استعمال کا اعتراف کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق شام کی طرف سے فضائی روٹ قطر کو دور ہونے کی وجہ سے کافی مہنگا پڑتا ہے جب کہ قطری فضائی کمپنی مسلسل دوسرے سال خسارے کا سامنا کررہی ہے۔

حال ہی میں یہ خبر سامنے آئی تھی کہ قطر نے شام کی فضائی حدود استعمال کرنا شروع کردی ہیں۔ اب دوحہ کی طرف سے سرکاری طور پر کہا گیا ہے کہ وہ چار عرب ممالک کے 2017ء سے جاری بائیکاٹ کے بعد شام کی فضائی حدود کے استعمال پر مجبور ہوا ہے۔

مبصرین کا خیال ہے کہ قطر نے شام کی فضائی حدود کے استعمال کا فیصلہ ایران کی ہدایت پر کیا ہے۔ ایران ایک بار پھر شامی رجیم اور قطری حکومت کو ایک دوسرے کے قریب لانے کے لیے سرگرم ہے۔ اگرچہ شام کی فضائی حدود کے استعمال کا قطری فضائی کمپنیوں کو کوئی فایدہ نہیں پہنچے گا۔ اس اقدام کا اصل مقصد دمشق اور دوحہ کے درمیان ایرانی سرپرستی میں پرانی دوستی بحال کرنا ہے۔

ایران اس سے قبل بھی بار بار کئی مواقع پر قطر اور دمشق کے درمیان رابطے بحال کرنے کی ضرورت پر زور دیتا رہا ہے۔ ایران کا کہنا ہے کہ شام کی تعمیر نو میں قطر اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں