.

’ڈارک‘ سائٹ کے ذریعے منشیات اور اسلحہ کا دھندا کرنے کے الزام میں دو اسرائیلی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل میں دو مشتبہ یہودیوں کو ایک ’ڈارک‘ انٹرنیٹ سائٹ کے ذریعے منشیات اورا سلحہ کا دھندا کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔اسرائیلی پولیس کے مطابق وہ اس ویب گاہ کو ہتھیاروں اور منشیات کی خریداری اور کریڈٹ کارڈز کی چوری کے لیے استعمال کرتے رہے تھے۔

ان دونوں مشتبہ افراد کی گرفتاری امریکا کے وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف بی آئی) اور اسرائیل کے سائبر کرائم یونٹ کی مشترکہ تحقیقات کے نتیجے میں عمل میں آئی ہے۔ان کی عمریں پینتیس ، چھتیس سال بتائی گئی ہیں۔اس گینگ میں شامل افراد کی فرانس ، جرمنی ، نیدرلینڈز اور برازیل میں بھی گرفتاریاں عمل میں آئی ہیں۔

پولیس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ یہ مشتبہ افراد اپنی ’ ڈارک‘ انٹرنیٹ سائٹ کو غیر قانونی سرگرمیوں اور جرائم کے لیے استعمال کررہے تھے۔یہ ویب گاہ ایک عرصے سے فعال تھی اور اس کے ذریعے کروڑوں ڈالرز کا لین دین ہوا تھا اور رقوم منتقل کی گئی تھیں۔

پولیس کے مطابق اس سائٹ کے ذریعے صارفین کی دوسری ویب گاہوں کی جانب رہ نمائی کی جاتی تھی جو غیر قانونی سرگرمیوں اور جرائم کے لیے استعمال کی جارہی تھیں ۔یہ تمام ویب گاہیں ایک دوسرے سے مل کر کام کرتی تھیں اور غیرقانونی سرگرمیوں میں ایک دوسرے کی پردہ پوشی بھی کرتی تھیں۔ وہ بٹ کوائن کے ذریعے لین دین کرتی تھیں۔پولیس اب اس تمام معاملے کی تحقیقات کررہی ہے۔ گرفتار دونوں مشتبہ اسرائیلیوں کو تل ابیب کی ایک عدالت میں پیش کیا جارہا ہے۔

تین جرمن شہریوں کو گذشتہ ہفتے دنیا کی سب سے بڑی ڈارک ویب گاہیں چلانے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔وہ انھیں منشیات اور دوسری ممنوعہ اشیاء کی فروخت کے لیے استعمال کررہے تھے ۔ان کے خلاف دو سال کی تحقیقات کے بعد دو ممالک میں فرد جر م عاید کی گئی ہے۔ان کے معاون اور پروموٹر کا کردار ادا کرنے والے ایک چوتھے شخص کو برازیل میں گرفتار کیا گیا ہے۔