شیخ عبدالرحمن السدیس کی حجر اسود کو خوشبو لگانے اور حطیم کی دھلائی کے عمل میں شرکت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مسجد حرام اور مسجد نبوی کے امور کے عمومی نگران شیخ ڈاکٹر عبدالرحمن السدیس نے حرم مکی میں حجر اسود اور ملتزم پر خوشبو لگانے اور حطیم کے اندر کی جگہ کی دھلائی کے عمل میں شرکت کی۔

اس موقع پر شیخ السدیس نے مسجد حرام میں خوشبو اور دُھونی کے ذمے دار یونٹ پر زور دیا کہ حجر اسود اور ملتزم کو پابندی کے ساتھ عطر لگانے کا خاص خیال رکھا جائے تا کہ اللہ کے مہمانوں کو مناسک کے دوران فرحت اور سکون کا احساس ملے۔

سربراہ عام نے کہا کہ "مسجد حرام میں خوشبو لگانے اور تطہیر کا کام انجام دینے کے لیے جدید ٹکنالوجی کا استعمال ضروری ہے۔ اس جلیل القدر ذمے داری کو انجام دینے کے لیے مرد اور خواتین کارکنان کو خصوصی تربیت فراہم کی جانی چاہیے۔ اللہ رب العزت نے اپنے خلیل حضرت ابراہیم عليه السلام کو حکم دیا کہ وہ اس بیت العتیق کو پاک کریں۔ قرآن کریم میں ارشاد باری تعالی ہے (وَإِذْ بَوَّأْنَا لِإِبْرَاهِيمَ مَكَانَ الْبَيْتِ أَن لَّا تُشْرِكْ بِي شَيْئًا وَطَهِّرْ بَيْتِيَ لِلطَّائِفِينَ وَالْقَائِمِينَ وَالرُّكَّعِ السُّجُودِ) ... ہمارے لیے یہ اعزاز کافی ہے کہ ہم ہم انبیاء کی سنت پر عمل پیرا ہیں"۔

شیخ السدیس نے دن اور رات کے دوران مسجد حرام میں کئی مرتبہ خوشبو لگانے اور دھونی دینے کے سلسلے میں نافذ العمل منصوبے کو سراہا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں