.

مصر: سکیورٹی فورسز کی کارروائی میں 47انتہا پسند جنگجو ہلاک، پانچ فوجی بھی مارے گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کی سکیورٹی فورسز نے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سیناء میں جاری کارروائی کے دوران میں مزید 47 انتہا پسند جنگجوؤں کو ہلاک کردیا ہے۔

مصری فوج نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا ہے کہ جنگجوؤں کے ساتھ جھڑپوں میں پانچ فوجی بھی مارے گئے ہیں۔تاہم فوج نے بیان میں یہ وضاحت نہیں کی ہے کہ یہ ہلاکتیں کب اور کہاں ہوئی ہیں۔اس نے ایک ویڈیو میں صرف یہ بتانے پر اکتفا کیا ہے کہ یہ ہلاکتیں گذشتہ’’کچھ عرصے‘‘ کے دوران میں ہوئی ہیں۔

اس نے فوجی کارروائی میں ہلاک شدہ جنگجوؤں کی شناخت بھی نہیں بتائی اور نہ یہ بتایا ہے کہ وہ کس گروپ سے وابستہ تھے۔فوج نے یہ بھی کہا ہے کہ اس نے 385 دھماکا خیز ڈیوائسز برآمد کی تھیں اور انھیں ناکارہ بنا دیا گیا ہے۔

مصری فوج نے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سیناء میں گذشتہ کوئی سوا ایک سال کے دوران میں مختلف اوقات میں سیکڑوں جنگجوؤں کو ہلاک کرنے کی اطلاعات دی ہیں۔مصری فوج نے صدر عبدالفتاح السیسی کے حکم پر گذشتہ سال فروری میں ’’سیناء 2018ء‘‘ کے نام سے داعش کے انتہا پسندوں کے قلع قمع کے لیے ایک بڑی فوجی کارروائی شروع کی تھی۔مصری فوج شمالی سیناء کے علاوہ وسطی نیل ڈیلٹا اور لیبیا کی سرحد کے ساتھ واقع مغربی صحرا میں بھی جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کررہی ہے ۔