.

خواتین خدام کیسے زائرین بیت اللہ میں آسانیاں تقسیم کرتی ہیں؟ جانئے اس رپورٹ میں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں ماہ صیام کے موقع پر مقامات مقدسہ کی زیارت کے لیے آنے والے مسلمانوں کی تعداد میں اضافے کے بعد زائرین کی خدمت کے لیے کام کرنے والے رضاکاروں کی تعداد بھی بڑھ جاتی ہے۔

بیت اللہ کی زیارت کے لیے دنیا کے کونے کونے سے آنے والے اللہ کے مہمانوں کی خدمت کے جذبے سے سرشار 530 خواتین رضاکار بھی اس وقت توجہ کو مرکز ہیں۔ خدام خواتین رضاکاروں‌ کی یہ ٹیم مکہ معظمہ کے محکمہ تعلیم کی طرف سے تشکیل دی گئی ہے۔ محکمہ تعلیم موسم گرما میں طالبات کی سرگرمیوں‌ میں معتمرین کی خدمت کوبھی شامل کرتی ہے۔ موسم گرما کی تعطیلات میں طالبات کو معتمرین کی خدمت پر مامور کیا جاتا ہے۔

بادر بنات رضاکار کلب کی سربراہ نجات الحربی نے بتایا کہ ان کے کلب کی طرف سے اب تک مسجد حرام میں 21 ہزار 650 گھنٹے رضا کار سرگرمیوں‌ میں صرف کیے جا چکےہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہماری ٹیم 530 رضا کارائوں پر مشتمل ہے جن میں بیشتر جامعات کی طالبات ہیں۔

مرکزی علاقے الھجلہ میں طبی مرکز سے زائرین اور معتمرین کی معاونت کے لیے 18 گھنٹے کام کیا گیا۔ مسجد حرام میں سیکیورٹی اہلکاروں‌ کے ساتھ تعاون کے لیے 2000 گھنٹے کام کیا گیا۔ خواتین رضا کاروں کی ٹیم اب تک مسجد حرام میں 3855 روزہ داروں میں افطار کے کھانے تقسیم کرچکی ہے۔