رنگ ونسل کے امتیاز سے بے پروا سعودی شہریوں کی اجتماعی صفائی مہم

سخت گرمی میں ان جوانوں ’’جبل الفیل‘‘ کو اپنی منفرد مہم کا مرکز بنایا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں ماہ صیام کے دوران مختلف رنگ اور نسل کے شہریوں نے ایک منفرد صفائی مہم شروع کی ہے۔ ان کا ہدف ماہ صیام میں مملکت میں 1000 مقامات کی صفائی کو یقینی بنانا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق 'عطاء کریم' کے عنوان سے شروع کی گئی اس مہم میں العلاء کمشنری کی یوتھ کونسل کے ارکان پیش پیش ہیں۔ العلاء میں واقع ’’جبل الفیل‘‘ میں ماہ صیام کے ایام میں علی الصباح نوجوان رضاکاروں کی بڑی تعداد دیکھی جا سکتی ہے۔ یہ سب ماہ صیام کے بابرکت ایام میں نیکی سے محبت، ماحول کے تحفظ اور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے اس فرمان کہ' راستے سے تکلیف دہ چیز ہٹانا بھی صدقہ ہے' کے جذبے سے سرشار ہیں۔

سعودی عرب میں ان دنوں اچھی خاصی گرمی ہے مگر صفائی کے کار خیر میں پیش پیش رضاکاروں نے گرمی کی شدت کی پرواہ کیے بغیر اپنے وطن کو پاک اور صاف رکھنے کا مشن جاری رکھا ہوا ہے۔ العلاء میں صفائی کےاس عظیم مشن میں مقامی سول سوسائٹی اور نوجوان مردو خواتین سب پیش پیش ہیں۔ العلاء میں سیاحتی مقامات اور دیگر جگہوں کی صفائی میں پیش پیش ان نوجوانوں‌ نے مہم ماہ صیام کے آخر تک جاری رکھنے اور 1000 جگہوں کو کوڑے کرکٹ سے پاک کرنے کا عزم صمیم کیا ہے۔

ملک کی صفائی کے مشن میں العلا کی نوجوان نسل شامل ہے۔ نوجوانوں کی ایسی صحت مند سرگرمی میں دلچسپی اقتصادی، ثقافتی اور سیاحتی ترکی کی علامت ہے۔ نوجوانوں کا از خود اپنے ملک اور گلی محلے کی صفائی کے لیے اٹھ کھڑا ہونا ان کی بیداری اور شعور کی پختگی کا ثبوت ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں