ایران نواز شیعہ ملیشیا نے سرکاری خزانہ لوٹ کر دولت بنائی: حیدر العبادی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

عراق کے سابق وزیراعظم حیدر العبادی نے ایران نواز شیعہ ملیشیا ’’الحشد الشعبی‘‘ کے اُن رہ نماؤں پر کڑی نکتہ چینی کی ہے جنہوں نے پراسرار طور پر سرکاری خزانہ لوٹ کر دولت جمع کی۔

ایک عراقی چینل کو دیے گئے انٹرویو کے دوران العبادی سے مذکورہ قیادت کی ملکیتی املاک اور جائیداد کے ذرائع کے بارے میں سوال کیا گیا تھا۔

اس سے قبل النصر الائنس کے سربراہ یہ کہہ چکے ہیں کہ موجودہ سیاسی منظر نامہ کوٹے سے زیادہ برا ہے اور اصلاح کا عمل لوگوں میں نہیں بلکہ طریقہ کار میں ہونا چاہیے۔

العبادی کے مطابق ملک کے مفاد کو ذاتی مفادات پر مقدم رکھا جانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ "بدعنوان عناصر نے اپنے مفادات کے خوف کے سبب فیصلہ کر لیا تھا کہ مجھے دوسری بار جیتنے نہ دیا جائے"۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ "میں نے بدعنوانی روکنے کے لئے کام کیا، لیکن یہ معاملہ مزید کوشش اور وقت کا مطالبہ کرتا ہے"۔ انہوں نے واضح کیا کہ دہشت گردی کے خاتمے کی صورت میں حاصل ہونے والی کامیابی اور بغداد کا امن انتہائی کوششوں کے بعد یقینی بنایا گیا جس میں عراقیوں کی انتھک محنت شامل ہے۔

یاد رہے کہ اگست 2018 میں العبادی نے قومی سلامتی کے مشیر اور الحشد الشعبی کے سربراہ فالح الفیاض کو ان کی سیاسی سرگرمی کے سبب برطرف کر دیا تھا۔

اُس وقت عراقی حکومت کے دفتر سے جاری بیان میں باور کرایا گیا تھا کہ برطرفی کا سبب فالح الفیاض کی جانب سے سیاسی اور جماعتی کام میں داخل ہونا اور سیاسی امور میں رکاوٹ بننا ہے۔ یہ امور اُن کو سونپی گئی سیکورٹی کی حساس ذمے داریوں سے متصادم ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں