.

'#مکہ_سمٹ سے عرب اور اسلامی رہنما ایک موقف اپنا سکیں گے: سپیکر عرب پارلیمنٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب پارلیمنٹ کے سپیکر ڈاکٹر مشعل بن فہم السلامی کا کہنا ہے کہ سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی جانب سے #مکہ_سمٹ اور دیگر علاقائی تنظیموں کے اجلاس بلانے کا فیصلہ وقت کی عین ضرورت کے مطابق کیا گیا ہے۔

السلامی کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا کہ سعودی عرب میں ان اجلاسوں کے انعقاد سے عرب اور اسلامی ممالک کو ایک متفقہ موقف اپنانے میں مدد ملے گی۔

سعودی خبر رساں ایجنسی ایس پی اے کے مطابق سپیکر عرب پارلیمنٹ کا کہنا تھا کہ خطے کو درپیش مسائل اور علاقائی تنظیموں کے ارکان ممالک کی خود مختاری اور سلامی کو یقینی بنانے کے لئے سب کا ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا ہونا ضروری ہے۔

ڈاکٹر مشعل السلامی نے اس موقع پر سعودی عرب کی جانب سے ایک ذمہ دارانہ اور اہم کردار ادا کرنے پر سعودی حکومت کی تعریف کی اور کہا کہ سعودی عرب عرب اور اسلامی ممالک کا خیر خواہ ہے۔

عرب پارلیمنٹ کے سپیکر نے سعودی عرب کی آئل پائپ لائن اور اماراتی سمندری حدود میں بحری جہازوں پر ڈرون حملوں کو 'دہشت گردانہ' قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایسے اقدامات کا مقصد عالمی معیشت کو نقصان پہنچانا ہے۔