.

حوثی سعودی عرب کو کس کس اسلحہ سے نشانہ بنا رہے ہیں؟ جانئے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں جدہ کے کنگ عبدالعزیز انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر بدھ کے روز ایک نمائش کا انعقاد ہوا۔ نمائش میں متعدد میزائلوں، ڈرون طیاروں، دھماکا خیز مواد کی حامل کشتیوں اور دیگر عسکری ساز وسامان کو پیش گیا جن کو حوثی ملیشیا نے سعودی عرب کو نشانہ بنانے کی کارروائیوں میں استعمال کیا۔ ان چیزوں سے ایرانی نظام کے دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث ہونے کا بھی ثبوت ملتا ہے۔

سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی SPA کے مطابق "حقائق في دقائق" [Facts in Minutes] کے نام سے منعقد کی جانے والی اس نمائش میں ایرانی ساخت کے بیلسٹک میزائل، ایرانی ڈرون طیارے، ایرانی ساخت کے RPG، ایرانی ساخت کی آپٹیکل ٹیلی اسکوپ اور ایرانی ٹیکنالوجی کی حامل ریموٹ کنٹرولڈ دھماکا خیز بحری کشتی شامل ہے۔

یہ نمائش سعودی وزارت دفاع ، وزارت خارجہ اور یمن میں ترقیاتی اور تعمیر نو مرکز کے مشترکہ تعاون سے منعقد کی گئی۔ نمائش میں نگرانی کی ذمے داری انجام دینے والوں میں یمن کے لیے سعودی عرب کے سفیر محمد آل جابر، یمن میں سرگرم عرب اتحاد کے سرکاری ترجمان کرنل ترکی المالکی اور سعودی وزارت خارجہ کے رابطہ مرکز کے ڈائریکٹر احمد الطویان شامل تھے۔