.

حکومت سے اختلافات کے بعد ایرانی وزیر تعلیم مستعفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی حکومت نے وزیر تعلیم وتربیت محمد بطحائی کو ان کے عہدے سے سبکدوش کر دیا ہے۔ منصب سے ہٹائے جانے کی وجہ وزیر موصوف کی پیش آئند انتخاب لڑنے کی نیت بتائی جاتی ہے۔

ایران ذرائع استعفیٰ لئے جانے کی ایک دوسری وجہ بیان کرتے ہوئے بتاتے ہیں کہ ’’حسن روحانی وزیر تعلیم کی کارکردگی سے خوش نہیں تھے، جس کی وجہ سے ان سے عہدہ واپس لیا گیا ہے۔‘‘

ینگ رپورٹرز ایسوسی ایشن نامی خبر رساں ایجنسی نے بتایا ہے کہ وزیر تعلیم نے حکومت کی طرف سے اساتذہ کے معاملات سے متعلق پہلو تہی، ترقیوں اور مالی مشکلات کی وجہ سے استعفی دیا۔

سپاہ پاسداران انقلاب کی مقرب ’’تسنیم‘‘ نیوز ایجنسی نے حکومت کے باخبر ذرائع کا بیان نقل کرتے ہوئے بتایا کہ وزیر تعلیم محمد بطحائی کے استعفی کی وجوہات ذاتی نوعیت کی ہیں۔

ادھر سرکاری خبر رساں ایجنسی ’’ایرنا‘‘ نے صدر روحانی کے ترجمان کے دفتر کے حوالے سے بتایا کہ صدر مملکت نے جناب بطحائی کا استعفی منظور کر لیا ہے۔ استعفیٰ کی منظوری پیش آئند پارلیمانی انتخاب لڑنے میں دلچسپی رکھنے والے افراد کے ناموں کی رجسٹریشن سے قبل سامنے آئی ہے۔