.

آئل ٹینکر کو نکالنے کے دوران ایرانی کشتیوں نے مزاحمت کی: امریکی عہدہ دار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایک امریکی عہدہ دار نے انکشاف کیا ہے کہ خلیج عُمان میں حملوں‌ کے نتیجے میں متاثر ہونے والے تیل بردار نارویجن جہاز 'فرنٹ الٹیئر' کو وہاں سے نکالنے اور کھینچنے کے دوران ایرانی کشتیوں‌ نے مزاحمت کی۔

العربیہ ڈاٹ‌ نیٹ کے مطابق نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر امریکی عہدہ دار نے بتایا کہ ایران کی تیز رفتار کشتیاں فرنٹ الٹیئر آئل ٹینکر کے قریب آئیں اور اسے کھینچنے سے روکنے کی کوشش کی۔

تاہم امریکی عہدیدار نے ایرانی کشتیوں‌ کی طرف سے رکاوٹ پیدا کیے جانے کی مزید تفصیلات بیان نہیں کی ہیں ان کا کہنا ہے کہ حملوں سے مُتاثرہ جہاز کو ایک دوسرے جہاز کے ساتھ باندھ کر وہاں‌ سے نکالنے کی کوشش کے دوران ایران کی تیز رفتار کشتیوں نے مداخلت کی تھی۔

ادھر ناروے کی فرنٹ لائن کمپنی نے جمعہ کی شام ایک بیان میں کہا ہے کہ متاثرہ تیل بردار بحری جہازفرنٹ الٹیئر میں لگنے والی آگ کو بجھانے کا عمل جاری ہے۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ متاثرہ جہاز کو ایک دوسرے ریسکیو جہاز کے ذریعے مدد فراہم کی جا رہی ہے۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ بحری جہاز کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ انسانی غلطی یا فنی خرابی کا نتیجہ نہیں۔ کمپنی اس حوالے سے مختلف پہلوئوں‌ پر تحقیقات کر رہی ہے۔