.

الحدیدہ : عوامی بازار کے بیچ حوثیوں کے اسلحہ گودام میں دھماکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں ذرائع نے بتایا ہے کہ بدھ کی شب ملک کے مغربی شہر الحدیدہ کے ایک علاقے میں حوثی ملیشیا کے اسلحہ گودام میں دھماکا ہوا۔

مشترکہ مزاحمت کے عسکری ذریعے نے بتایا کہ الحدیدہ شہر میں حوثیوں کے ایک اسلحہ گودام میں پراسرار دھماکے کے بعد الحلقہ سبزی بازار میں آگ بھڑک اٹھی۔

ذریعے کے مطابق آتش زدگی کے ساتھ ہی گودام میں متعدد دھماکے ہوئے۔ واضح رہے کہ حوثی ملیشیا نے دانستہ طور پر اسلحے کو عوامی بازار کے بیچ ذخیرہ کیا۔ اس کے سبب شہریوں کی زندگیوں کو شدید خطرہ لاحق ہے۔

مذکورہ واقعہ اس بات کی ایک اور دلیل ہے کہ حوثی ملیشیا کی جانب سے یومیہ بنیاد پر الحدیدہ میں نئی صف بندی کے معاہدے کی خلاف ورزیاں جاری ہیں۔

یاد رہے کہ بدھ کو علی الصبح حوثی ملیشیا نے الحدیدہ شہر کے مشرق میں عسکری ٹھکانوں پر درمیانے اور بھاری ہتھیاروں کے ساتھ حملہ کیا۔ اس کے نتیجے میں گھمسان کی لڑائی ہوئی۔ مشترکہ یمنی فورسز نے بتایا کہ حوثیوں کے مذکورہ حملے کو ناکام بنا دیا گیا۔ یہ دسمبر 2018 کے بعد سے الحدیدہ صوبے میں اب تک کا شدید ترین حملہ تھا۔

ادھر ایک یمنی عسکری ذمے دار نے بدھ کے روز کہا کہ باغی حوثی ملیشیا کی جانب سے حالیہ جارحیت پر سکون حالات کو برباد کرنے کے لیے ایرانی منصوبوں کا انکشاف کرتی ہے۔