.

ایران سے اڑھائی کروڑ ڈالر کی رقم لے کرفرار ہونے والا عہدہ دار گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی حکام نے وزارت پٹرولیم کے ڈائریکٹر برائے مالیاتی امور کو 25 ملین ڈالر کی خطیر رقم کے ساتھ ملک سے فرار ہونے کی کوشش کے دوران حراست میں لے لیا ہے۔

ایرانی پاسداران انقلاب کی مقرب نیوز ایجنسی'تسنیم' کے مطابق ایرانی عہدہ دار نےایک دوسرے بنکار کے بنک کھاتے میں رقم منتقل کی اور خود ملک سے فرارہونے کی کوشش کررہا تھا جسے بیرون ملک روانہ ہونے سے قبل ہی دھرلیا گیا۔ اس کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی۔

رپورٹ کے مطابق ایرانی عہدیدار نے ایک بنک کار کی مدد سے غیرملکی کرنسی کی خطیر رقم بیرون ملک منتقل کرنے کی کوشش کی تھی حالانکہ ایران سے ڈالر بیرون ملک لے جانے پر پابندی عاید ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایرانی وزارت پٹرولیم کے عہدہ دار کو بدھ کے روز ملک سےفرار ہونے کی کوشش کے دوران حراست میں لیا گیا۔

پولیس نے اس کے معاون کو بھی حراست میں لینے کے بعد تفتیش کے لیے جیل منتقل کردیا ہے۔ خیال رہے کہ ایران میں وزارت پٹرولیم کو کرپشن کا گڑھ سمجھا جاتا ہے۔ لوٹ مار،چوری،غبن، رشوت اورمالی بدعنوانے کے دیگر حربوں کے الزام میں دسیوں ایرانی عہدیداروں اور سرکاری افسران کے خلاف عدالتی کارروائی کی جا چکی ہے۔

گذشتہ برس دسمبر میں ایران نےاسمگلنگ اور جعل سازی کے الزام میں دو ایرانی تاجروں کو سزائے موت دی تھی۔