.

عرب پارلیمان نے حوثی ملیشیا کو دہشت گرد تنظیم قرار دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب ممالک کی نمائندہ پارلیمنٹ نے یمن کے ایرانی حمایت یافتہ حوثی دہشت گرد گروپ کو 'دہشت گرد' تنظیم قرار دیتے ہوئے عرب لیگ اور اقوام متحدہ سے بھی حوثیوں کو دہشت گرد قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ‌ نیٹ‌ کے مطابق بدھ کے روز عرب پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈاکٹر مشعل بن فہم السلمی نے یمنی پارلیمنٹ کے اسپیکر سلطان البرکانی کے ہمراہ قاہرہ میں ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب میں‌کہا کہ حوثی ملیشیا یمن میں شہریوں پرحملے اور شہری املاک اورعوامی تنصیبات کو نقصان پہنچا رہی ہے۔

انہوں‌ نے کہا کہ عرب پارلیمنٹ نے حوثیوں کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے کے ساتھ عرب لیگ اور اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ یمنی عوام کی زندگیاں خطرے میں ڈالنے اور امدادی سامان کی لوٹ مارمیں ملوث حوثٰی باغیوں کو دہشت گرد قراردیں۔

انہوں‌نے کہاکہ حوثیوں‌کے پاس کوئی معقول ریاستی پروگرام نہیں بلکہ وہ ایران کے اشاروں‌پر چل کر ایرانی کٹھ پتلی کا کردار ادا کررہےہیں۔ انہوں‌نے کہا کہ عرب پارلیمنٹ نے مشترکہ طورپر حوثی ملیشیا کو دہشت گرد قراردے کر یمنی قوم کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔

اس موقع پر یمنی پارلیمنٹ‌کے اسپیکر سلطان البرکانی نے کہا کہ یمن میں تخریب کاری کرنےکرنے والے نہ صرف یمن کی سلامتی پر حملہ آور ہیں بلکہ وہ عرب اقوام کی قومی سلامتی کو خطرے میں ڈالے ہوئے ہیں۔

انہوں‌نے کہا کہ حوثی ایک دہشت گرد مافیا ہے جس نےیمن میں سب کچھ تباہ کردیا ہے۔ یمنی عوام کے لیے ملنے والی مالی امداد غصب کرلی جاتی ہے اور سعودی عرب پربھی میزائل حملے کیے جاتے ہیں‌۔