.

امریکا ایران کشیدگی، فضائی کمپنیوں نے آبنائے ہرمز سے پروازوں کا روٹ بدل دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متعدد یورپی ملکوں‌ نے اپنی فضائی کمپنیوں کو بین الاقوامی آبی تجارتی گذرگاہ آبنائے ہرمز کی فضاء سے پروازیں چلانے پر پابندی عاید کی ہے۔

خبر رساں اداروں کے مطابق 'آسٹریلیا، ہالینڈ اور جرمنی نے اپنی فضائی کمپنیوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ آبنائے ہُرمز کی فضا سے اپنی پروازوں کی آمد ورفت پر پابندی عاید کریں۔

جرمنی کی سب سے بڑی فضائی کمپنی 'لوفٹ ھانزا' کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اس کے طیاروں کو ایران کے بعض علاقوں اور آبنائے ہرمز کی فضاء سے گذرنے سے روک دیا گیا ہے۔ اس سے قبل امریکا کی وفاقی فضائی کمپنی کے طیاروں کی پروازوں‌ پر بھی پابندی عاید کر دی گئی ہے۔

جرمن فضائی کمپنی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ 20 جون سے کمپنی کے طیارے آبنائے ہرمز کی فضاء کے بجائے متبادل فضائی روٹس پر اڑائے جا رہے ہیں۔

ادھر ہالینڈ کی ایک فضائی کمپنی 'ایل ایم' نے بھی طیاروں کو ایران کے بعض علاقوں کی فضاء کو استعمال کرنے سے روک دیا ہے۔ تاہم اس کی تفصیل سامنے نہیں لائی گئی۔

خبر رساں اداروں کے مطابق جرمنی، ہالینڈ اور دوسرےملکوں‌کی فضائی کمپنیوں کو کہا گیا ہے کہ وہ امریکی فضائی کمپنی کے فیصلے کے بعد ایران کی فضائی حدود بالخصوص آبنائے ہرمز کے بجائے متبادل فضائی راستے استعمال کریں۔

خیال رہے کہ یہ پیش رفت ایک ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب دوسری جانب امریکا اور ایران کے درمیان حالیہ ایام میں سخت کشیدگی پائی جا رہی ہے۔