.

شمالی الحدیدہ میں حوثیوں کےعسکری ٹھکانوں پر اتحادی فوج کی شدید بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کی رِٹ کی بحالی میں سرگرم عرب اتحادی فوج نے جمعرات کے روز ساحلی علاقے الحدیدہ کے شمال میں ایران نواز حوثی شدت پسندوں کے متعدد ٹھکانوں‌ پر بمباری کی جس کے نتیجے میں باغیوں کو غیر معمولی جانی اور مالی نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

العربیہ چینل کی رپورٹ‌ کے مطابق عرب اتحادی فوج کی طرف سے جاری ایک بیان میں یمنی شہریوں‌ سے کہا گیا ہے کہ وہ حوثی دہشت گردوں کے فوجی ٹھکانوں سے دور رہیں تاکہ کسی فوجی کارروائی کےوقت شہریوں کو جانی نقصان سے بچایا جا سکے۔ بیان میں‌ کہا گیا ہے کہ حوثی شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر حملے باغیوں کی دہشت گردانہ کارروائیوں اور ان کی فوجی صلاحیت کو تباہ کرنے کے لیے ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ حوثیوں کے خلاف کارروائیاں بین الاقوامی قوانین کے مطابق اور عالمی انسانی معاہدوں کے ضوابط کے تحت کی جا رہی ہیں۔

عرب اتحادی فوج کا کہنا ہے کہ اس نے شمالی الحدیدہ میں حوثیوں کی بارود سے بھری متعدد کشتیوں‌ کو بھی نشانہ بنایا جو بین الاقوامی جہاز رانی کے لیے خطرہ تھیں۔

العربیہ چینل کے ذرائع کے مطابق شمالی الحدیدہ میں بحر الاحمر میں عالمی جہازوں‌ پر حملوں‌ کے لیے تیار کی گئی حوثیوں کی 9 بارود بردار کشتیاں تباہ کردی گئیں۔

ادھر شمالی الحدیدہ کے مشرقی اور شمالی محاذوں، الواحہ اور دیگر مقامات پر حوثی باغیوں اور سرکاری فوج کے درمیان گھمسان کی لڑائی کی اطلاعات ہیں۔

میدانی ذرائع کا کہنا ہے کہ حوثی ملیشیا نے شاہراہ خمسین اور ایئرپورٹ روڈ پر بڑی تعداد میں اپنے ماہر نشانچی تعینات کر دیے ہیں‌ جو عام شہریوں پر بھی گولیاں چلا رہے ہیں۔