.

واشنگٹن: ایرانی فضائی حدود میں امریکی طیاروں کی پرواز پر پابندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

واشنگٹن نے جمعے کے روز ایک فیصلے میں ایرانی فضائی حدود میں امریکی طیاروں کی پرواز پر پابندی عائد کر دی ہے۔ یہ فیصلہ ایران کی جانب سے انتہائی بلندی پر اڑنے والے ایک امریکی جاسوس ڈرون طیارے کو مار گرائے جانے کے بعد سامنے آیا ہے۔

امریکی ہوابازی کے ادارے نے کہا ہے کہ اسے شہری طیاروں کے فضائی روٹس کے نزدیک کشیدگی میں اضافے پر تشویش ہے۔

فضائی کمپنیوں کو بھیجے گئے بیان میں امریکی ادارے نے بتایا کہ فضائی پروازوں کی نگرانی سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ ایرانی میزائل سے گرائے جانے والے ڈرون طیارے کے نزدیک ترین شہری طیارہ تقریبا 45 سمندری میل کے دائرہ کار میں تھا۔

ادارے کے مطابق ڈرون طیارے کو نشانہ بنائے جانے کے وقت علاقے میں کئی شہری طیارے محو پرواز تھے۔

اس سے قبل ایک امریکی فضائی کمپنیUnited Airlines نے اعلان کیا تھا کہ اس نے نیویارک ایئرپورٹ سے بھارت کے شہر ممبئی جانے والی پروازوں کو معطل کر دیا ہے۔ یہ فیصلہ ایران کی جانب سے انتہائی بلندی پر پرواز کرنے والے ایک امریکی جاسوس ڈرون طیارے کو مار گرائے جانے کے بعد ،،، سلامتی سے متعلق جائزے کی بنیاد پر سامنے آیا۔