.

شام : اسرائیلی حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 15 ہو گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں اتوار کی شب اسرائیلی حملے میں 15 افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے جن میں 6 شہری شامل ہیں۔ شام میں انسانی حقوق کے نگراں گروپ المرصد نے پیر کے روز بتایا کہ یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ آیا یہ افراد بم باری سے ، میزائلوں کی باقیات کے ٹکڑے لگنے سے یا پھر دھماکوں کے بعد ہونے والے دباؤ کے نتیجے میں ہلاک ہوئے۔

المرصد کے مطابق دمشق کے نواح اور حمص کے دیہی علاقے میں اسرائیلی کارروائی میں بشار حکومت کے ہمنوا مسلح عناصر کے 9 جنگجو اور چھ شہری جاں بحق ہوئے۔ شہریوں میں تین بچے بھی شامل ہیں۔

اس سے قبل شام میں بشار حکومت کے میڈیا نے بتایا تھا کہ دارالحکومت دمشق کے نزدیک اسرائیلی حملے میں چار شہری ہلاک ہو گئے۔ سرکاری میڈیا نے باور کرایا کہ اس کے فضائی دفاعی نظام نے دمشق اور حمص شہر کے اطراف داغے گئے میزائلوں کے حملوں کو ناکام بنا دیا۔ سرکاری خبر رساں ایجنسی SANA کے مطابق ان میں کئی میزائلوں کو فضا میں تباہ کر دیا گیا۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی نے اپنے دو نمائندوں کے حوالے سے بتایا کہ دارالحکومت دمشق میں زور دار دھماکے سنے گئے۔ شام میں انسانی حقوق کے نگراں گروپ المرصد کے مطابق دمشق اور حمص کے اطراف کے علاقوں کو نشانہ بنانے والے میزائلوں کو اسرائیلی بحری جنگی جہازوں سے داغا گیا۔

الحدث نیوز چینل کے نمائندے نے بتایا کہ اسرائیلی طیاروں نے لبنان کے علاقے البقاع کے اوپر پرواز کرتے ہوئے المزہ، الکسوہ اور جمرایہ کے علاقوں میں حزب اللہ تنظیم کے ہتھیاروں کے گوداموں کو نشانہ بنایا۔ اسی طرح اسرائیل کی جانب سے شام میں حمص کے دیہی علاقے میں ٹھکانوں پر بھی بم باری کی گئی۔