.

بحرین کا حزب اللہ کے ارکان پارلیمنٹ پر امریکی پابندیوں کا خیر مقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خلیجی ریاست بحرین نے امریکی وزارت خزانہ کہ طرف سے حزب اللہ کے دو ارکان پارلیمنٹ سمیت 3 اہم رہنماؤں کو بلیک لسٹ کیے جانے سے متعلق اقدام کا خیر مقدم کیا ہے۔

’’العربیہ‘‘ کے مطابق بحرین کے وزیر خارجہ خالد بن احمد آل خلیفہ نے ایک بیان میں کہا کہ امریکا کی طرف سے حزب اللہ کے دو ارکان پارلیمنٹ سمیت تین رہ نمائوں کو بلیک لسٹ کرنا اور اُنہیں دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کرنا مثبت پیش رفت ہے۔

'ٹویٹر' پر جاری ایک بیان میں خالد بن احمدآل خلیفہ نے کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ چیزوں کو ان کے اصل نام سے پکارا جائے۔ دہشت گرد مافیا اپنے لیڈروں کو سیاسی بازو کے لیے منتخب کرتے ہیں۔ دیگر عناصر اسلحہ اٹھاتے، سرنگیں کھودتے اور ریاست کی سلامتی کے خلاف کام کرتے ہیں۔

خیال رہے کہ منگل کو امریکی وزارت خزانہ نے حزب اللہ کے دو ارکان پارلیمنٹ سمیت تین رہ نمائوں کو بلیک لسٹ کردیا تھا۔ بلیک لسٹ ہونے والے ارکان پارلیمان میں امین شری اور محمد حسن رعد شامل ہیں جب ایک تیسرے رہ نما وفیق صفا کو بھی بلیک لسٹ کردیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ سنہ 2017ء‌ کے بعد امریکا حزب اللہ سے منسلک 50 افراد اور اداروں کو بلیک لسٹ کر اچکا ہے۔