.

یمن کے شہر تعز میں "ایرانی ساخت" کا ڈرون طیارہ تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے جنوب مغربی شہر تعز میں سرکاری فوج نے باغی حوثی ملیشیا کا ایک ڈرون طیارہ مار گرایا۔

ایک عسکری ذریعے کے مطابق مذکورہ ڈرون طیارہ تعز شہر کے شمال مغربی محاذ پر واقع فضائی دفاع کے کیمپ میں یمنی فوج کے علاقوں پر جاسوسی کر رہا تھا۔

یمنی فوج کی سرکاری ویب سائٹ کے مطابق طیارے کی جانچ کے بعد تصدیق ہو گئی ہے کہ طیارہ ایران کا تیار کردہ تھا۔

گذشتہ برس اکتوبر میں یمنی فوج نے تعز شہر میں باغی حوثی ملیشیا کے دو ڈرون طیارے مار گرائے تھے۔ ان میں پہلا طیارہ شہر کے مشرق میں اور دوسرا شہر کے جنوب میں تباہ ہوا۔

حوثی ملیشیا نے حالیہ عرصے میں ڈرون جاسوس اور دھماکا خیز مواد سے بھرے طیاروں کا استعمال بڑھا دیا ہے۔ اقوام متحدہ کے ماہرین کی ایک رپورٹ کے مطابق یہ طیارے بیرون ملک سے آنے والے اجزاء کے ذریعے اسمبل کیے گئے۔ رپورٹ میں واضح کیا گیا ہے کہ حوثیوں کے زیر استعمال "قاصف" اور "المہاجم" ڈرون طیارے اپنے ڈیزائن اور صلاحیتوں میں قریباً ایرانی ساختہ "ابابيل" ڈرون طیارے ایسے ہیں۔