.

نیتن یاھو کی حزب اللہ پر کاری ضرب لگانے کی دھمکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے دھمکی دی ہے کہ اگر لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ نے حملے کی کوشش کی تو اس پر کاری ضرب لگائی جائے گی۔

نیتن یاھو نے حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ کے دھمکی آمیز بیان کے جواب میں کہا کہ حزب اللہ کو اسرائیل کی طاقت کا اندازہ نہیں۔ اگر اس نے اسرائیل پرحملے کی حماقت کی تو اس پر کاری ضرب لگائی جائے گی۔

خیال رہے کہ دو روز قبل حزب اللہ کے سربراہ حسن نصر اللہ کا ایک بیان سامنے آیا تھا جس میں انہوں‌ نے کہا تھا کہ آج کی حزب اللہ سنہ 2006ء کی نسبت کہیں زیادہ طاقت ور ہے اور وہ اسرائیل کے ایک ایک چپے کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

حسن نصر اللہ کے اس دھمکی آمیز بیان پر کابینہ کے اجلاس میں سخت ردعمل کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ حسن نصر اللہ کے الفاظ انتہائی مہلک اور خطرناک ہیں۔

انہوں‌ نے کہا کہ اگر حزب اللہ کی طرف سے اسرائیل پر حملے کی کوشش کی گئی تو اس کا بھرپور جواب دیا جائے گا اور حزب اللہ پر کاری ضرب لگائی جائے گی۔

نیتن یاھو نے کہا کہ ہم نے حسن نصراللہ کی گیدڑ ببھکیاں سنی ہیں اور اس کے عزائم کے بارے میں معلوم ہوا ہے۔ میں واضح‌ کر دینا چاہتا ہوں کی اگر حزب اللہ نے اسرائیل کی سلامتی کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی تو اسے اس کا مزہ چکھایا جائے گا۔