.

یمن کے لیے 'یو این' ایلچی مارٹن گریفتھس کا دورہ سعودی عرب

یمنی حکومت کا سویڈن معاہدہ معطل کرنے پرغور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی مارٹن گریفتھس کل سوموار کو یمنی حکومت کے نمائندوں سے مذاکرات کے لیے سعودی عرب کا دورہ کریں گے۔

دوسری جانب 'العربیہ' چینل کے ذرائع کے مطابق یمنی حکومت نے اقوام متحدہ کی زیر نگرانی سویڈن کی میزبانی میں حوثی باغیوں‌ کے ساتھ طے پایا جنگ بندی سمجھوتہ معطل کرنے پر غور شروع کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مارٹن گریفتھس یمن میں جنگ بندی کی کوششوں کو آگے بڑھانے کے لیے تمام اہم اسٹیک ہولڈرز سے مذاکرات کر چکے ہیں۔ حال ہی میں انہوں‌ نے روس، متحدہ عرب امارات، امریکا اور سلطنت عمان کے میراتھن دورے کیے۔

ان دوروں کا مقصد یمن میں جنگ بندی کے عمل کو آگے بڑھانے کے لیے عالمی برادری کا تعاون حاصل کرنا اور فریقین کو سویڈن سمجھوتے پر عمل درآمد کے لیے دبائو میں لانا تھا۔

ادھر یمنی ایوان صدر کے ایک ذریعے کا کہنا ہے کہ حکومت نے حوثیوں کی طرف سے جنگ بندی معاہدے کی مسلسل خلاف ورزیوں کے بعد سویڈن سمجھوتے پرعمل درآمد معطل کرنے پر غور شروع کیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حوثی ملیشیا کی طرف سے زیرحراست افراد کو تشدد کا نشانہ بنائے جانے کے ساتھ متعدد اہم رہ نمائوں اور حکومت کی حامی شخصیات کو سزائے موت دی گئی ہے۔

یہ اقدامات جنگ بندی معاہدے کی سنگین خلاف ورزی ہیں۔ حوثی ملیشیا نے کئی اعتدال پسند دانشوروں، سماجی کارکنوں، طلباء اور دیگر شخصیات کو حراست میں لے رکھا ہے اور ان کے خلاف ظالمانہ مقدمات قائم کیے جا رہے ہیں۔