.

سعودی شہر جازان میں حوثیوں کے ڈرون حملے کی ایک اور کوشش ناکام

ڈرون طیارہ فضاء میں‌ تباہ کردیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کی معاون عرب اتحادی فوج نے ایران نواز حوثی ملیشیا کی طرف سے سعودی شہر جازان کے طرف بھیجا گیا ایک اور ڈرون طیارہ مار گرایا۔

سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے بتایا کہ اتحادی فوج نے بدھ کو یمن کے حوثی باغیوں کی طرف سے ارسال کردہ ایک جاسوس ڈورن طیارہ مار گرایا۔ قبل ازیں منگل اور بدھ کی درمیانی شب ابھاء اور جازان پر حملوں اور جاسوسی کے لیے بھیجے گئے حوثی باغیوں‌ کے تین ڈرون مار گرائے گئے تھے۔

جاسوسی طیارے ایران نواز حوثی ملیشیا نے جازان کے شہری اہداف کو نشانہ بنانے کے لئے ڈورن بھیجا، تاہم سعودی فضائیہ نے اسے ہدف تک پہنچنے سے پہلے مار گرایا۔

قبل ازیں حوثی باغیوں‌ کی طرف سے سعودی عرب کے شہروں أبها، جازان اور نجران کے ہوائی اڈوں پر شہری تنصیبات کو دہشت گرد حوثیوں کی جانب سے نشانہ بنانے کی یہ کوششیں ایسے وقت میں ہو رہی ہیں جب اقوام متحدہ کے یمن لئے خصوصی ایلچی دالحکومت صنعاء میں موجود ہیں۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ ایسے حالات میں حوثیوں کی طرف سے مملکت کی تنصیبات کو نشانہ بنانے سے متعلق اقدامات سے باغی ملیشیا کے یمنی عوام اور ہمسایہ ممالک کے خلاف دہشت گرد کارروائیوں، جرائم اور انتہا پسند سوچ کی عکاسی ہوتی ہے۔ نیز حوثیوں کی ان کارروائیوں کے تسلسل سے عالمی امن کو بھی شدید خطرات لاحق ہیں۔