.

جدہ: 400 سے زیادہ خواتین سائیکلنگ کا شوق پورا کرنے میں مصروف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے ساحلی شہر جدہ میں خواتین کے ایک گروپ نے سائیکلنگ کا مظاہرہ کیا۔

جدہ سیزن کے ضمن میں ہونے والی اس سرگرمی کے سلسلے میں خواتین کی ایک بڑی تعداد ساحل سمندر کے نزدیک اور جدہ کی تاریخی شاہراہوں پر اپنا سائیکلنگ کا شوق پورا کرتی ہوئی نظر آئیں۔

یہ آئیڈیا سعودی شہری ہانی صیرفی کا ہے۔ انہوں نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ " Brave_cyclist# ٹیم کا آغاز اس وقت ہوا جب میری بہن نے سائیکل خریدنے کا فیصلہ کیا۔ اس نے سائیکلنگ کے کھیل سے متعلق خواتین کی ٹیموں کی تلاش شروع کر دی تو اسے چند گروپ ملے جو شاذ و نادر ہی سائیکلنگ کی کسی سرگرمی کو انجام دیتے ہیں۔ لہذا میری بہن نے خواتین کا ایک گروپ بنانے کا فیصلہ کیا جو مکمل آزادی اور پیشہ وارانہ طریقے سے سائیکلنگ کے کھیل میں خواتین کی شرکت کو یقینی بنائے"۔

ہانی نے مزید بتایا کہ انہوں نے ٹیم کا یہ نام اس لیے چُنا تا کہ خواتین میں سائیکلنگ کے کھیل کے حوالے سے جو خوف کی رکاوٹ حائل ہے ، اس کو گرایا جا سکے۔ سائیکل کو آمد و رفت کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے اور یہ صحت کے لیے بہت مفید سرگرمی ہے۔ سائیکلنگ کرنے سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ کھیل کی سرگرمیوں میں خواتین کسی طور بھی مردں سے کم صلاحیت کی حامل نہیں ہیں۔

ہانی نے باور کرایا کہ خواتین کی یہ ٹیم سائیکلنگ کے کھیل کے حوالے سے آگاہی اور جان کاری پھیلانے کا مقصد رکھتی ہے ... تا کہ ویژن 2030 پروگرام کے ضمن میں کھیلوں میں دل چسپی رکھنے والا ایک صحت مند معاشرہ تشکیل دیا جا سکے۔ یہ ٹیم سائیکلنگ کی ابتدا کرنے والی خواتین کو تربیت فراہم کرتا ہے۔ اس کے علاوہ 20 اور 50 کلو میٹر کے فاصلے کے لیے جسمانی فٹنس کے حوالے سے جدید مشقوں کی تعلیم بھی دی جاتی ہے۔

صیرفی کے مطابق سائیکلنگ کے مذکورہ پروگرام میں شریک ہونے والی خواتین کی تعداد 400 سے زیادہ ہو چکی ہے اور اس میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے۔ گروپ کی تشکیل کے بعد صرف 3.5 ماہ کے مختصر عرصے میں اتنی بڑی تعداد ایک حوصلہ افزا بات ہے۔