.

یمن: صنعاء میں عسکری اہداف پر عرب اتحاد کے تابڑ توڑ حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کی مشترکہ فورسز نے ہفتے کو علی الصبح صنعاء صوبے میں ایک فوجی کارروائی کے دوران فضائی دفاع کے پانچ ٹھکانوں اور بیلسٹک میزائل کے ایک گودام کو تباہ کر دیا۔ یہ بات عرب اتحاد کے سرکاری ترجمان کرنل ترکی المالکی نے بتائی۔

المالکی نے باور کرایا کہ عرب اتحاد کی مشترکہ فورسز کی کمان دہشت گرد حوثی ملیشیا اور دیگر دہشت گرد تنظیموں کو اس نوعیت کی صلاحیتوں کے استعمال سے روکنے کے لیے پُر عزم ہے جو اقوام متحدہ کے طیاروں ، فضائی نیوی گیشن اور شہریوں کی جانوں کے لیے براہ راست خطرے کے مترادف ہے۔

اسی طرح کرنل المالکی نے باور کرایا کہ عرب اتحاد کی جانب سے نشانہ بنانے کی کارروائی بین الاقوامی انسانی قانون اور ضوابط کے ساتھ مطابقت رکھتی ہے۔ اتحاد کی مشترکہ فورسز نے شہریوں کو ممکنہ نقصان سے بچانے کے لیے تمام تر احتیاطی اقدامات کے بعد کارروائی کی۔

ادھر یمنی سرکاری فوج نے جمعے کے روز حوثی ملیشیا کے مرکزی گڑھ صعدہ صوبے میں پیش قدمی کی ہے۔ یمن کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے ایک عسکری ذریعے کے حوالے سے بتایا کہ باقم ضلع میں النار پہاڑی سلسلے کے متوازی پہاڑی علاقے کو واپس لے لیا گیا ہے۔ اس دوران حوثی ملیشیا کے نشانچیوں کے ایک گروپ کو ختم کر دیا گیا جو یمن کی قومی فوج کی سپلائی کو نشانہ بنا رہا تھا۔

مذکورہ ذریعے کے مطابق باقم ضلع کے مرکز پر کنٹرول حاصل کرنے تک وسیع فوجی کارروائیاں جاری رہیں گی۔