.

بحیرۂ احمر میں حوثیوں کی بمبار کشتی سے مال بردار جہاز کو نشانہ بنانے کی کوشش ناکام

عرب اتحادی فوج نے بمبار کشتی حملے سے قبل تباہ کرکے جہاز کو بچا لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کے دفاع میں قائم عرب اتحادی فوج نے ایران نواز حوثی ملیشیا کی طرف سے بمبار کشتی کی مدد سے ایک تجارتی بحری جہاز کو نشانہ بنانے کی کوشش ناکام بنا دی۔

عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے ایک بیان میں‌ بتایا کہ اتحاد ایرانی حمایت یافتہ حوثی باغیوں کا تعاقب جاری رکھے گا۔ انہوں‌ نے بتایا کہ بحیرۂ احمر میں ایک بم بار کشتی کے ذریعے تجارتی جہاز کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کی گئی تھی مگر اتحادی فوج نے بروقت کارروائی کرکے بمبار کشتی کوتباہ کردیا۔

سوموار کو ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں کرنل المالکی نے کہا کہ عرب اتحاد حوثی باغیوں کی جدید جنگی صلاحیت کو توڑنے کی کوشش کررہی ہے۔ عرب اتحاد نے حوثیوں کے میزائلوں اور ڈرون طیاروں کے ذریعے کیے گئے حملوں کو کامیابی سے ناکام بنا کر دہشت گردی کے منصوبے ناکام بنائے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں‌ نے بتایا کہ حوثیوں کی ایک بمبار کشتی بحیرۂ احمر میں ایک تجارتی بحری جہاز کی طرف بڑھ رہی تھی۔ اسے بروقت کارروائی کرکے تباہ کردیا گیا۔

انہوں‌ نے انکشاف کیا کہ عرب اتحاد نے حوثی ملیشیا کے متعدد اسلحہ اور میزائل مراکز تباہ کیے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے کہا کہ حوثی ملیشیا سویڈن میں طے پائے جنگ بندی معاہدے کو تباہ کرنے اور بین الاقوامی قوانین کی صریح خلاف ورزیوں کا مرتکب ہو رہا ہے۔ انہوں نے حوثیوں پر الزام عاید کیا کہ وہ یمن اور سعودی عرب میں شہری آبادی کو دہشت گردانہ حملوں کا نشانہ بنا رہے ہیں۔