.

شب کے جمالیاتی حُسن کے پیچھے سرگرداں سعودی فوٹوگرافر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں الوجہ کے علاقے سے تعلق رکھنے والے فوٹوگرافر ترکی ہاشم العباسی نے فطرت کے جمالیاتی حُسن کو پیش کرنے کے لیے ایک مختلف انداز اپنایا ہے۔ وہ شام کی فضاؤں اور شب کی تاریکیوں کو استعمال میں لا کر فطرت کی خوب صورتی کو نمایاں کرتے ہیں۔ اسی بنیاد پر ترکی کو "گہری شاموں کے عاشق" کا خطاب دیا گیا ہے۔

ترکی نے اپنی تصاویر کے مجموعے میں مملکت کے علاقوں الوجہ، ضباء، حائل، الفارعہ اور امالا میں رات کی ماہیت اور فطرت کو خصوصی جگہ دی ہے۔ یہ تصاویر رواں سال موسم گرما کے دوران لی گئیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے ترکی نے بتایا کہ "میں نے شب کے اوقات میں خشکی اور سمندری فطرت اور تاریخی آثار کو کیمرے کی آنکھ میں محفوظ کیا۔ اس کا مقصد سیاحوں کو کشش دلانا اور خصوصی مقامات کو نمایاں کرنا ہے"۔

ترکی سعودی عرب کے ضلع الوجہ میں فوٹوگرافروں کے گروپ کے بانی اور نگراں ہیں۔ وہ فوٹوگرافی کے میدان میں کئی نمائشوں اور مقابلوں میں شرکت کر چکے ہیں۔

جدت پسند سعودی فوٹوگرافر کا کہنا ہے کہ "میں شب کی جمالیات کا متلاشی فوٹوگرافر ہوں .. خالق کائنات کی عظیم صناعی کو پیش کرنے کے لیے میں ہمیشہ گہری شام یا نصف شب کا وقت چُنتا ہوں .. روشنی ، سایہ اور شام کی تاریکی ان مقامات کی خوب صورتی کو نمایاں کرنے میں اہم کردار ادا کرتی ہے"۔

ترکی نے اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ بطور سعودی فوٹوگرافر عالمی سطح تک پہنچنے کے لیے تمام رکاوٹیں عبور کرنے کے لیے تیار ہیں۔

اپنی گفتگو کے اختتام پر ترکی کا کہنا تھا کہ شام کے اوقات میں سعودی عرب میں قدرتی مناظر ایسی دولت ہیں جن کو پیشہ وارانہ فوٹوگرافی کے ذریعے مزید دریافت کرنے کی ضرورت ہے۔