.

مصری دارالافتاء نے قطر کی مذہبی ویب سائیٹ کے مواد کو متنازع قرار دیا

اہل اسلام کو 'اسلام ویب' سے رہ نمائی نہ لینے کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے دارالافتاء نے قطری علماء کی سرپرستی آن لائن دینی معلومات کی سروسز فراہم کرنے والی ویب سائیٹ 'اسلام ویب' کو مُتنازع قرار دیتے ہوئے اس سے رہ نمائی نہ لینے کی تاکید کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے مصری دارالافتاء کے ڈائریکٹر طارق ابو ھشیمہ نے کہا کہ قطر سرکاری سطح پر 'اسلام ویب' کو فنڈز فراہم کر رہا ہے۔ اس ویب سائیٹ پر شائع کیے جانے والے فتاویٰ غیر مستند ہونے کے ساتھ اسلام کی اعتدال پسندانہ تعلیمات کی حقیقی عکاسی نہیں کرتے۔

انہوں نے مزید کہا کہ قطر کی وزارت اوقاف جن پانچ بڑی ویب سائیٹ کی سرپرستی کرتی ہے ان میں 'اسلام ویب' بھی شامل ہے۔ ان ویب سائیٹس کی وجہ سے قطر اسلامی دنیا میں آن لائن فتاوا شائع کرنے والا تیسرا بڑا ملک بن چکا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اسلام ویب سے دینی معلومات کی رہ نمائی نہ لی جائے کیونکہ اس پر شائع کردہ مواد مستند نہیں۔

ابو ھشیمہ کا مزید کہنا تھا کہ مذکورہ ویب سائیٹ نے صارفین کو اپنی جانب متوجہ کرنے کے لیے اس پرکشش ڈیزائن تیار کرنے کے ساتھ اس کی برائوزنگ آسان کردی ہے جس کے نتیجے میں کوئی بھی صارف آسانی کے ساتھ اس ویب سائیٹ پر موجود فتاویٰ سیکشن تک پہنچ سکتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ ویب سائیٹ موبائل فون پر اپیلی کیشن کے ذریعے چلائی جاسکتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ یہ پوری دنیا میں وسیع پیمانے پر دیکھی جانے والی ویب سائیٹ بن چکی ہے۔