عراق میں جرائم کی دنیا کا 'سرغنہ' ساتھیوں سمیت گرفتار

حجی حمزہ نے جوا خانے، فحاشی اور منشیات کے اڈے بنار رکھے تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عراق کی سیکیورٹی فورسز نے بدنام زمانہ جوئے باز، فحاشی کے اڈے چلانے اور منشیات کی اسمگلنگ میں ملوث جرائم پیشہ عناصر کا سرغہ اور اس کے 25 معاونت کاروں کو حراست میں لے لیا ہے۔ جرائم کی دنیا کے اس بدنام زمانہ اور مکروہ کردار کے معاونت کاروں میں ایرانی حمایت یافتہ شیعہ ملیشیا الحشد الشعبی سےمنسلک افراد بھی شامل ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عراقی سیکیورٹی فورسز کے مطابق پولیس نے دارالحکومت بغداد سمیت ملک کے دوسرے شہروں میں چھاپوں کے دوران مافیا کے سرغنہ حجی حمزہ الشمری کو حراست میں لینے کے ساتھ اس کے جرائم کے تمام اڈوں جن میں جوئے خانے، فحاشی کے اڈے، منشیات کے دھندہ خانےبند کردیے ہیں۔

عراقی سیکیورٹی فورسز کے مطابق جرائم پیشہ اشتہاریوں کو حراست میں لینے کے ساتھ ان کے قبضے سے منشیات، رقوم اور دیگر اشیاء قبضے میں لے لی گئی ہیں اور تمام گرفتار افراد کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی گئی ہے۔

خیال رہے کہ عراق میں جرائم پیشہ مافیا کے خلاف یہ کارروائی وزیراعظم عادل عبدالمہدی کی ہدایت پر عمل میں لائی گئی۔ یہ گروپ جسے الحشد کی حمایت حاصل رہی ہے منشیات کی اسمگلنگ، جوئے خانے چلانے اور خواتین کی خریدو فروخت کے مکروہ دھندے میں ملوث تھا۔ ملک کے با اثر افراد اس گروپ کی پشت پناہی کررہے جس کی وجہ سے اس کے خلاف کارروائی میں مشکلات پیش آ رہی تھیں۔

جرائم کی دنیا کے بدنام زمانہ سرغنہ حجی حمزہ کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ منشیات کی اسمگلنگ، فحاشی کے اڈوں اور جوئے خانوں سے یومیہ ایک ملین ڈالر کماتا رہا ہے۔ اس نے عراق کے بڑے بڑے لگژری ہوٹلوں اور نائیٹ کلبوں میں اپنے اڈے بنا رکھے تھے۔

خیال رہے کہ عراق میں نائیٹ کلبوں، شراب کی خریدو فروخت کے غیرمجاز اڈوں اور دیگر جرائم کے مراکز کی بڑی تعداد پائی جاتی ہے مگر عراقی سیکیورٹی فورسز ان پراس لیے ہاتھ نہیں ڈال سکتی تھیں کہ ان کے پیچھے با اثر لوگوں کا ہاتھ تھا۔ سیکیورٹی فورسز اس کے ان کے خلاف کارروائی سے کتراتے تھے کہ ان جرائم پیشہ افراد کی طرف سے سیکیورٹی اہلکاروں اور ان کے خاندانوں کی جان کوخطرات لاحق ہوسکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں