.

خلیج میں جہاز رانی کو نشانہ بنائے جانے پر سعودی عرب اور امریکا کی تشویش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر توانائی خالد الفالح کا کہنا ہے کہ انہوں نے منگل کے روز واشنگٹن میں اپنے امریکی ہم منصب رِک بیری سے ملاقات کی۔ اس موقع پر دونوں شخصیات نے خلیج میں جہاز رانی کی آزادی کو درپیش خطرات پر اپنی تشویش کا اظہار کیا۔ یہ بات خالد الفالح نے اپنی ٹویٹ میں بتائی۔

سعودی وزیر کے مطابق دونوں ملکوں نے توانائی کے شعبے میں عالمی ترسیل کی سیکورٹی کو یقینی بنانے کے لیے مل کر کام کرنے کا عزم ظاہر کیا ہے۔

الفالح اور بیری کے درمیان تیل کی عالمی منڈی کی صورت حال اور مملکت کی جانب سے اس کو مستحکم رکھنے کی خواہش پر بھی بات چیت ہوئی۔ سعودی وزیر نے باور کرایا کہ اوپیک تنظیم اور اس سے باہر تیل پیدا کرنے والے ممالک ،،، پیداوار کے حوالے سے رابطہ کاری اور پٹرولیم کی مارکیٹ میں توازن کے لیے سنجیدہ کوششوں کے پابند ہیں۔

آبنائے ہرمز کے قریب تیل بردار جہازوں میں دھماکوں کی ذمے داری تہران پر عائد کرنے کے بعد واشنگٹن اب ایک بحری سیکورٹی اتحاد تشکیل دینے کے واسطے کوشاں ہے۔