کرائسٹ چرچ میں خوف و دہشت کا شکار ہونے کے بعد اب مکہ مکرمہ کی روحانی فضاؤں میں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امیر اور شعیب ... نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں دو مساجد پر دہشت گرد حملوں کے متاثرین میں شامل دو مسلمان ہیں۔ ان میں ایک نے اپنے والد اور دوسرے نے اپنے بھائی کو اس خونی واقعے میں کھو دیا۔ کرائسٹ چرچ حملوں میں دہشت ، خوف اور صدمے سے دوچار ہونے والے امیر اور شعیب اب سعودی فرماں روا کے خصوصی مہمان کی حیثیت سے حج کی ادائیگی کے لیے مکہ مکرمہ کی روحانی فضاؤں میں موجود ہیں۔

نیوزی لینڈ کے عازم حج "امير" کی عمر 15 برس ہے۔ وہ مناسک حج کی ادائیگی کے لیے اور بیت اللہ کے دیدار کے شوق میں مسرت کے جذبات کے ساتھ مکہ مکرمہ پہنچا۔ امیر نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے اپنی کہانی اس طرح بیان کی .."نیوزی لینڈ میں کرائسٹ چرچ شہر کی ایک مسجد میں ایک مسلح شخص داخل ہوا اور اس کی فائرنگ کے نتیجے میں درجنوں افراد جاں بحق اور زخمی ہو گئے۔ موت کی نیند سلا دیے جانے والوں میں میرے والد (مرحوم) بھی شامل تھے جو میری زندگی کا کُل اثاثہ تھے۔ تاہم میں اللہ کے فیصلے پر ایمان رکھتا ہوں"۔

امیر کے ساتھ موجود دوسرے عازم حج "شعيب" نے بھی عمر کی 15 بہاریں دیکھی ہیں۔ شعیب کا کہنا ہے کہ بدترین دہشت گردی کے واقعے میں بھائی کی موت کی خبر اس پر بجلی بن کر گری۔ میرا بھائی نماز جمعہ ادا کرنے مسجد گیا تھا مگر اس کے بعد میں نے اسے گولیوں کا نشانہ بننے والوں کے بیچ دیکھا۔ یہاں بیت اللہ کے سامنے کھڑے ہو کر میں نے اپنے گھرانے بالخصوص اپنے مرحوم بھائی کے واسطے دعا کی"۔

مہمانانِ خادم حرمین شریفین پروگرام کے لیے مختص رہائش گاہ پر سعودی قومی لباس پہنے ہوئے امیر اور شعیب لوگوں کی توجہ کا مرکز بن گئے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ سعودی لباس پہن کر مسرت محسوس کر رہے ہیں اور یہ مملکت سعودی عرب کے لیے ان کی محبت کے اظہار کا خاص طریقہ ہے۔ امیر اور شعیب نے بتایا کہ انہوں نے حجاز مقدس میں یادگاری تصاویر لے کر انہیں سوشل میڈیا پر پوسٹ کیا اور اپنے اہل خانہ اور دوستوں کو بھی ارسال کیں۔

امیر اور شعیب نے فریضہ حج کے لیے میزبانی اور مہمانان کو خصوصی سہولیات اور خدمات پیش کرنے پر خادم حرمین شریفین اور ولی عہد کے لیے تشکر کا اظہار کیا اور اس اقدام کو قدر کی نگاہ سے دیکھا۔

رواں سال مہمانان خادم حرمین شریفین پروگرام (برائے حج و عمرہ) کے تحت نیوزی لینڈ میں دہشت گردی کے واقعات کا شکار ہونے والے افراد کے اہل خانہ میں سے 200 افراد کو فریضہ حج کی ادائیگی کے لیے خصوصی دعوت پر حجاز مقدس بلایا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں