.

حزب اللہ کی دھمکیوں سے مرعوب نہیں ہوں گے: اسرائیلی وزیراعظم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے کہا ہے کہ اسرائیل لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے دھمکی آمیز بیانات سے مرعوب نہیں ہوگا۔ انہوں نے حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ کوخبردار کیا کہ اگر اس نے تل ابیب کے مفادات کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی تو اسے سخت جواب دیا جائے گا۔

خیال رہے کہ حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ نے ایک بیان میں اسرائیل کو خبردار کیا ہے کہ تل ابیب نے جنگ مسلط کرنے کی کوشش کی گئی تو حزب اللہ اپنی عسکری طاقت کا استعمال کرے گی۔

جمعہ کو سنہ 2006ء کی جنگ کی مناسبت سے ایک ٹی وی بیان میں حسن نصراللہ نے کہا کہ حزب اللہ نے لبنان کے گائوں، دیہاتوں اور شہروں کے دفاع کا مضبوط عسکری نظام تیار رکھا ہے۔

خیال رہے کہ سنہ 2006ء میں جاری رہنے والی 34 روزہ لرائی میں 1200 لبنانی جاں بحق اور حزب اللہ کے حملوں میں 160 اسرائیلی ہلاک ہوئے۔ اسرائیل میں زیادہ ترہلاکتیں فوجیوں کی ہوئیں۔ حسن نصراللہ نے کہا کہ اگر اسرائیل نے لبنان میں فوج داخل کی تو اس کی فوج کے قتل عام کو براہ راستٹی وی پردکھایا جائے گا۔

اس کے جواب میں نیتن یاھو نے کہا کہ ہم حزب اللہ کی دھمکیوں سے ہرگز مرعوب نہیں ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ حسن نصراللہ جانتے ہیں کہ وہ کیوں اپنے زمین دوز بنکر کے اندر سے اس طرح کا بیان دے رہے ہیں؟۔