حوثیوں کے گڑھ کے قریب پہاڑی علاقے پر یمنی فوج کا قبضہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کی سرکاری فوج نے عرب اتحادی فوج کی مدد سے ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کے گڑھ صعدہ گورنری میں دو اہم پہاڑی مقامات الحصامہ اور الظاہر پرقبضہ کرتے ہوئے باغیوں کو وہاں سے بھگا دای ہے۔

العربیہ اور الحدث چینلوں کی رپورٹس کے مطابق صعدہ گورنری کے نواحی علاقوں پر یمن کی آئینی فوج کے حملے میں حوثی ملیشیا کے جنگجو پسپا ہوگئے۔

سرکاری فوج نے حملہ کرکے پہاڑی علاقوں کے قریب قمبور اور المبرک قصبوں کوبھی حوثی باغیوں سے آزاد کرالیا ہے۔ اس کے علاوہ حکومتی فورسز نے جبل طیبان اور ام نعیرہ سے بھی حوثی باغیوں کو نکال باہر کیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پہاڑی علاقوں پر سرکاری فوج نے رات کے وقت چھ اطراف سے حملہ کیا۔ یمن کی بری فوج کو عرب اتحادی فوج کے طیاروں کی مدد حاصل تھی۔

خیال رہے کہ عرب اتحادی فوج اور یمنی فوج صعدہ گونری کا 8 محاذوں سے محاصرہ کرنے کے بعد اس کی طرف پیش قدمی کررہی ہیں۔

ادھر ہفتے کے روز شمالی صعدہ کی باقم ڈاریکٹوریٹ کے متعدد علاقوں کو بھی باغیوں سے چھڑا لیا۔

یمنی فوج کے بارڈر سیکیورٹی فورسز کے بریگیڈ 3 کے سربراہ بریگیڈیئر ھائل القشائی نے بتایا کہ سرکاری فوج کہ صعدہ کے اطراف میں واقع خشبان، التباب، تزویراتی اہمیت کا حامل علاقہ جبل النار باغیوں سے چھڑلیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں