سعودی عرب:کھجوروں کا 200 سال پرانا باغ سیاحوں کی توجہ کا مرکز

بریدہ میلے کے شرکاء کی بڑی تعداد کی تاریخ باغ میں آمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے شہر بریدہ میں واقع ایک کھجوروں کا ایک تاریخی باغ مقامی میلے کے شرکاء کی توجہ کا خاص مرکز ہے۔ تاریخی ریکارڈ سے پتا چلتا ہے کہ کھجوروں کا یہ باغ 200 سال پرانا ہے۔ اس میں کھجور کے سیکڑوں فلک بوس پھل دار درخت موجود ہیں۔

جنوبی الصباخ کالونی میں واقع یہ باغ 70ہزار مربع میٹر پرپھیلا ہوا ہے۔ اس باغ کو مقامی لوگوں کی پبلک بیٹھک بھی قرار دیا گیا تھا مگر وقت کے ساتھ ساتھ علاقے کے سیاحوں کی توجہ کا مرکز بن گیا۔

بریدہ کھجور میلے میں بڑی تعداد میں لوگ کھجوریں خریدنے آتے ہیں۔ یہ میلہ سعودی عرب میں کھجوروں کے شہر کہلاتا ہے۔ میلے میں کجھوروں کی خریدو فروخت کے ساتھ ساتھ کئی دیگر ثقافتی سرگرمیاں بھی ہوتی ہیں۔ ان سرگرمیوں کو حکومت، فلاحی اداروں اور سماجی بہبود کی تنظیموں کا تعاون حاصل ہوتا ہے۔

میلے کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر منصور المشطی نے کہا کہ بریدہ میلے میں کھجوروں کے خریداروں کے علاوہ بڑی تعداد میں شہری دیگر سرگرمیوں میں حصہ لینے یا ان سے لطف اندوز ہونے آتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں