.

یمن: الحدیدہ میں حوثیوں کی شہریوں کے گھروں پر گولہ باری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے مغربی صوبے الحدیدہ کے ضلع حیس میں منگل کے روز باغی حوثی ملیشیا کی جانب سے شہریوں کے گھروں پر توپ سے گولہ باری کے نتیجے میں 3 شہری شدید زخمی ہو گئے جن میں ایک بچہ بھی شامل ہے۔

مقامی ذرائع کے مطابق حوثی ملیشیا نے حیس شہر پر ایک بار پھر توپ کے گولے اور کیٹوشیا راکٹ برسائے۔

تینوں زخمیوں کو فوری طور پر علاج فراہم کرنے کے لیے فیلڈ ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

ذرائع کے مطابق حوثی ملیشیا نے توپ کے گولوں کے علاوہ مارٹر گولے شہریوں کے گھروں کی جانب داغے۔ اس دوران مارٹر گولے حیس ضلع کے وسط میں گرے اور شہریوں کے گھروں اور املاک کو شدید نقصان پہنچا۔

ذرائع نے باور کرایا کہ حوثی ملیشیا نے حالیہ عرصے میں الحدیدہ صوبے کے مختلف ضلعوں اور علاقوں میں شہریوں کے گھروں کو جنونی صورت میں بم باری کا نشانہ بنانا شروع کر دیا ہے۔ دوسری جانب اقوام متحدہ کی جانب سے باغیوں کے ان سنگین جرائم کو نظر انداز کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔

گزشتہ برس 18 دسمبر کو اسٹاک ہوم معاہدہ نافذ العمل ہونے کے بعد سے حوثی ملیشیا کی جانب سے الحدیدہ صوبے میں فائر بندی کی مسلسل خلاف ورزی کی جا رہی ہے۔ باغی ملیشیا حیس اور التحیتا کے ضلعوں میں گنجان آباد علاقوں پر آگ برسا رہی ہے۔ حوثیوں کی جانب سے الحدیدہ میں حملوں میں اضافہ ہو گیا ہے جس کا مقصد سویڈن معاہدے کو سبوتاژ کرنا ہے۔