.

ایرانی ہوائی اڈے پرعراقی خاتون پرتشدد کے واقعے کی تحقیقات

خاتون پرایرانی اہلکار کا وحشیانہ تشدد، واقعے کی ویڈیو وائرل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی حکومت کی وزارت خارجہ کے ترجمان احمد الصحاف نے بتایا ہے کہ ایران کے مشہد ہوائی اڈے پرایک عراقی خاتون پر ایرانی فوجی افسر کے تشدد کے واقعے کی تحقیقات کررہی ہے۔ان کا کہنا ہے کہ عراقی خاتون کو مشہد ہوائی اڈے پرایک ایئرپورٹ پرتعینات ایک ایرانی اہلکار کے ہاتھوں تشدد کے واقعے کی ویڈیو سامنے آئی ہے جس کے بعد واقعے کی تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔

الصحاف نے بتایا کہ عراق تمام غیرملکی شہریوں کےساتھ احترام اور انسانی اصولوں کے مطابق سلوک کرتا ہے۔ ہم توقع رکھتے ہیں کہ دنیا کے دوسرے ملکوں میں عراقی شہریوں کو بھی ایسا ہی احترام ملے گا۔

خیال رہے کہ عراقی خاتون پرایرانی ہوائی اڈے پر تشدد کا واقعہ 18 اگست 2019ء کو مقامی وقت کے مطابق رات ساڑھے آٹھ بجے پیش آیا جب مشہد ہوائی اڈے پرایک اہلکار نے پچاس سالہ عراقی خاتون پر تشدد کیا۔ یہ خاتون عراق کے شہر نجف سے ایران آئی تھی۔ سوشل میڈیا پر اس پرتشدد کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد اس کی تحقیقات کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔