.

ایرانی کردستان میں پاسداران انقلاب کا سینیر عہدیدارقاتلانہ حملے میں ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کے ذرائع ابلاغ کے مطابق پاسداران انقلاب کا ایک سینیر عہدیدار مغربی صوبہ کردستان کے بیرانشھر میں نامعلوم مسلح افراد کے قاتلانہ حملے میں ہلاک ہوگیا۔

ایرانی خبر رساں ایجنسی'فارس' کے مطابق بیرانشھر کےگورنر علی ترابی نے بتایا کہ پاسداران انقلاب کے ایک سینیر عہدیدار خالد شوانی کونامعلوم مسلح افراد نے حملہ کرکے ہلاک کردیا۔ یہ واقعہ بیرانشھر کے وسط میں شاہراہ استقلال پراس وقت پیش آیا جب پاسداران انقلاب کے اہلکار معمول کے گشت پر تھے۔

خیال رہے کہ ایران نے صوبہ کردستان میں کئی جنگجو گروپ علاحدگی کی جنگ لڑ رہے ہیں۔ ایران کا دعویٰ ہے کہ کردستان میں حملے کرنے والے کرد عسکریت پسندوں نے عراق کے صوبہ کردستان میں اپنے ٹھکانے بنارکھے ہیں۔

گذشتہ ماہ جولائی میں بیرانشھر میں کرد عسکریت پسندوں اور پاسداران انقلاب کے درمیان جھڑپ کے نتیجے میں تین اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئےتھے۔ ایران نے اس واقعے کے بعد عراق کے صوبہ کردستان میں کرد عسکریت پسندوں کے ٹھکانوں پر میزائل اور ڈرون طیاروں سے حملے کیے تھے۔