.

لیبیا : حفتر کی فوج وادی الہیرہ پر بم باری ، وفاقی فورسز کے متعدد مسلح ارکان ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا میں جنرل حفتر کی (قومی) فوج کی فضائیہ نے بدھ کو علی الصبح دارالحکومت طرابلس کے جنوب مغرب میں بم باری کی۔ اس دوران العزیزیہ اور غریان شہر کے بیچ واقع وادی الہیرہ کو نشانہ بنایا گیا۔ اس کے نتیجے میں وفاق کی حکومتی فورسز کے زیر انتظام ملیشیاؤں کے متعدد مسلح ارکان ہلاک ہو گئے۔

یہ کارروائی لیبیا کی فوج کی جانب سے رواں ہفتے کے آغاز پر شروع ہونے والے فیصلہ کن فوجی حملے کے سلسلے میں کی گئی۔ اس حملے کا مقصد غریان شہر کو وفاق کی فورسز سے واپس لینا ہے۔

وادی الہیرہ کو تزویراتی اہمیت کا حامل شمار کیا جاتا ہے۔ یہ العزیزیہ کے علاقے کو غریان شہر سے جوڑتی ہے۔ یہ لیبیا کے شمال کو مغرب سے ملانے والا مرکزی راستہ ہے۔ اسی طرح فوج کو عسکری کمک پہنچانے کے لیے ایک اہم گزر گاہ شمار ہوتی ہے۔

لیبیا کی فوج نے پیر کے روز غریان شہر کے وسط کی جانب اہم پیش قدمی کا اعلان کیا تھا۔ وہ شہر پر مکمل کنٹرول حاصل کرنے اور اسے مسلح ملیشیاؤں اور دہشت گرد جماعتوں سے آزاد کرانے کے قریب آ گئی تھی۔