.

یمن : رواں ماہ کے دوران 5435 بارودی سرنگیں صاف کی گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں بارودی سرنگوں کی صفائی کے سعودی پروگرام (مسام) کے مطابق رواں ماہ اگست 2019 کے دوران ملک کے متعدد آزاد کرائے گئے صوبوں اور علاقوں سے 5435 بارودی سرنگیں صاف کی گئیں۔ یہ بارودی سرنگیں باغی حوثی ملیشیا نے بچھائی تھیں۔

سعودی منصوبے کے ڈائریکٹر جنرل اسامہ القصیبی کا کہنا ہے کہ فیلڈ ٹیموں نے گذشتہ ہفتے کے دوران 2797 بارودی سرنگوں کو ہٹایا۔ اسی طرح 2107 نہ پھٹنے والے دھماکا خیز مواد اور 690 ٹینک شکن بارودی سرنگوں کو بھی صاف کیا گیا۔

مسام پروگرام کے ڈائریکٹر کے مطابق منصوبے کے آغاز سے لے کر رواں ماہ 22 اگست تک مجموعی طور پر 83748 بارودی سرنگوں اور نہ پھٹنے والے دھماکا خیز مواد کو صاف کیا گیا۔

یمنی حکومت کا کہنا ہے کہ جنگ کے آغاز کے بعد سے اب تک انجینئرنگ ٹیموں اور علاقائی اور بین الاقوامی پروگراموں کے تحت 5 لاکھ کے قریب بارودی سرنگیں اور دھماکا خیز مواد ناکارہ بنایا گیا۔

سرکاری بیانات کی روشنی میں دس لاکھ سے زیادہ بارودی سرنگیں وار دھماکا خیز مواد ہیں ابھی تک نصب ہیں جن کو ہٹایا نہیں گیا ہے۔

انسانی حقوق کی ایک رپورٹ کے مطابق باغی حوثی ملیشیا نے ستمبر 2014 میں آئینی حکومت کا تختہ الٹنے کے بعد سے بارودی سرنگوں اور دھماکا خیز مواد کو ہر طریقے سے استعمال کرنے کی منظم حکمت عملی پر انحصار کیا۔ رپورٹ میں باور کرایا گیا کہ حوثی ملیشیا نے یمن کو روئے زمین پر سب سے زیادہ بارودی سرنگوں کی حامل اراضی میں سے بنا دیا۔