.

یمن : عدن میں جھڑپوں کے بعد انتباہی خاموشی کا راج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے شہر عدن میں میں جمعرات کے روز انتباہی خاموشی چھائی ہوئی ہے۔ اس دوران بڑی تعداد میں عسکری تعیناتی دیکھنے میں آ رہی ہے۔ اس سے قبل بدھ کے روز علاقے میں حکومتی فوج اور جنوبی عبوری کونسل کے زیر انتظام عناصر کے بیچ جھڑپیں ہوئیں۔

عسکری ذرائع کے مطابق جنوبی عبوری کونسل لحض اور الضالع کے صوبوں میں اپنے زیر انتظام فورسز کے پانچ ہزار جنگجوؤں کو عدن لے کر آئی۔

اسی طرح لحج صوبے کے شہر الحوطہ کو عدن شہر سے ملانے والے راستے پر بھی کثیر فورسز کو تعینات کر دیا گیا ہے۔

ادھر عدن شہر کی مقامی آبادی نے اس بات کی گواہی دی ہے کہ عبوری کونسل کے زیر انتظام سیکورٹی بیلٹ فورسز کے نام سے معروف فورسز نے شہر کے مختلف حصوں میں آئینی حکومت کے حامیوں کے خلاف گرفتاری کی مہم چلا رکھی ہے۔ یمنی حکومت نے بدھ کے روز اعلان کیا تھا کہ اس نے عدن شہر کے کئی علاقوں پر کنٹرول حاصل کر لیا ہے۔

اسی طرح یمنی فوج نے ابین صوبے کے صدر مقام زنجبار شہر اور تزویراتی اہمیت کے حامل ساحلی شہرہ شقرہ پر بھی کنٹرول حاصل کرنے کا اعلان کیا۔