.

یمن میں ایک ہفتے کے دوران حوثیوں کی بچھائی 1980 بارودی سرنگیں تلف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں سعودی مائن کلیئرنس پروجیکٹ 'مسام' کی جانب سے باردوی سرنگوں کی تلفی کےلیے جاری آپریشن کے دوران ایک ہفتے میں 1980 بارودی سرنگیں ناکارہ بنائیں۔ یہ بارودی سرنگیں ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا نے متعدد علاقوں میں نصب کررکھا تھا

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق 'مسام' مرکز نے پیر کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ایک ہفتے کے دوران لوگوں کو نشانہ بنانے والی دو ، 332 ٹینک شکن بارودی سرنگیں تلف کی گئیں۔ اس کے علاوہ 1،629 غیردھماکہ خیز مواد اور 17 دھماکہ خیز آلات قبضے میں لے کرناکارہ بنائے گئے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اس منصوبے کے آغاز کے بعد سے اب تک یمن میں حوثی باغی ملیشیا کی طر ف سے اسکولوں اور مکانوں میں نصب 89،761 بارودی سرنگوں کو تلف کیا گیا۔یہ بارودی سرنگیں اور مائن مختلف شکلوں ، رنگوں اور طریقوں سے چھپانے کی کوشش کی جس سے بچوں ، خواتین اور بوڑھوں کی ایک بڑی تعداد لقمہ اجلی بنی۔ دسیوں افراد بارودی سرنگوں کے دھماکوں سے زخمی اور معذور ہوگئے۔

زیادہ تر بارودی سرنگیں حدیدہ کے علاقے میں بچھائی گئی تھیں۔ حوثی ملیشیا کی طرف سے رہائشی محلوں ، دیہات اور کھیتوں الحدیدہ کے مختلف علاقوں اور اضلاع میں شہریوں کے گھروں کے اطراف میں نصب بارودی سرنگوں کے دھماکوں سے سیکڑوں شہری مارے گئے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کی رپورٹ کے مطابق یمن کی 15 گورنریوں میں حوثی ملیشیا نے مجموعی طور پر 15 لاکھ بارودی سرنگیں نصب کی ہیں۔ ان میں سےبعض انتہائی تباہ کن اور دھماکہ خیز ہیں جو گاڑیوں کو بھی تباہ کرنے کا سبب بنتی ہیں۔