.

اسدی فوج نے مئی میں کیمیائی ہتھیار استعمال کیے تھے: امریکا کی تصدیق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ شامی صدر بشارالاسد کی فورسز نے مئی میں کیمیائی ہتھیار استعمال کیے تھے۔امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے جمعرات کو ایک بیان میں اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ ان کیمیائی حملوں کا جواب دیا جائے گا۔

انھوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا:’’ امریکا اس نتیجے پر پہنچا ہے کہ اسد رجیم نے کلورین کو کیمیائی ہتھیار کے طور پر استعمال کیا تھا۔اس حملے کو ایسے ہی نہیں جانے دیا جائے گا۔‘‘

امریکا نے قبل ازیں یہ کہا تھا کہ اس کو مئی میں صوبہ ادلب میں شامی فوج کی کارروائی کے دوران میں کیمیائی ہتھیاراستعمال کیے جانے شُبہ ہے اور وہ اس ضمن میں مزید معلومات حاصل کررہا ہے۔

واضح رہے کہ شام کے شمال مغربی صوبہ ادلب اور اس کے نواحی علاقوں پر ماضی میں القاعدہ سے وابستہ گروپ النصرہ محاذ اور دوسرے باغی گروپوں کا کنٹرول ہے اور اب یہی علاقہ بشار الاسد کی حکومت کی عمل داری سے باہر رہ گیا ہے۔ شامی فوج نے ادلب کو مفتوح بنانے کے لیے اپریل میں باغیوں کے ٹھکانوں اور مختلف شہروں پر تباہ کن فضائی مہم کا آغاز کیا تھا جس کے نتیجے میں سیکڑوں افراد ہلاک ہوگئے تھے۔