.

اسٹیشن پرآتش زدگی کے باوجود حرمین ایکسپریس30 دن میں بحال کرنے کا عزم

جدہ کے سلیمانیہ ریلوے اسٹیشن پربحالی کا کام تیزی کے ساتھ جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر برائے ٹرانسپورٹ اور سعودی ریلوے کمپنی (سار) کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے چیئرمین ڈاکٹر نبیل العامودی نے کہا ہے کہ جدہ میں سلیمانیہ الحرمین ٹرین اسٹیشن میں آگ لگنے سے ہونے والے نقصان کے باوجود ، حرمین ایکسپریس ٹرین نیو کنگ عبد العزیزریلوے اسٹیشن کو استعمال کرتے ہوئے اپنی سروسز 30 دن کے اندر فراہم کرے گی۔ ان کاکہنا ہے کہ حرمین ایکسپر یس جدہ کے رہائشیوں اور زائرین کو مکہ مکرمہ ، شاہ عبد اللہ اکنامک سٹی اور مدینہ کے اسٹیشنوں تک پہنچانے کا اپنا مشن جاری رکھے گی۔

سعودی عرب کی سرکاری نیوز ایجنسی 'ایس پی اے' کے مطابق نے وضاحت کی خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی طرف سے عازمین حج و عمرہ، اللہ کے مہمانوں اور دیگر زائرین کے لیے بھرپور اور بہترین سفری خدمات کی فراہمی کی ہدایت کی گئی ہے۔ اللہ کے مہمانوں کو مملکت میں بہترین، آرام دہ اور تیز رفتار سفری سہولیات کی فراہمی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ حال ہی میں جدہ شہر میں حرمین ایکسپریس کے سلیمانیہ اسٹیشن میں آتش زدگی کے بعد وہاں پر بحالی کا کام تیزی کے ساتھ جاری ہے۔تمام متعلقہ ادارے مل کر سلیمانیہ ریلوے اسٹیشن پرہونے والے نقصان کے ازالے اور اسٹیشن کو استعمال کے قابل لانے کے لیے کام کررہے ہیں۔
العامودی نے ریلوے اسٹیشن پرآتش زدگی پرقابون پانے میں مدد فراہم کرنے پر شہری دفاعی،فضائی سیکیورٹی سروس،ہلال احمر،آرامکو کمپنی کی معاون ٹیم اور فضائیہ کی طرف سے مدد کی فراہمی پر تمام اداروں کا شکریہ ادا کیا۔

وزیر موصوف کے ہمراہ ٹرانسپورٹ کے جنرل اتھارٹی کے چیئرمین ، جنرل آرگنائزیشن برائے ریلوے کے چیئرمین ڈاکٹر رمیح الرمیح اور سعودی ریلوے کمپنی (سار) کے چیف ایگزیکٹو ڈاکٹر بشار المالک اور دیگر حکام نے گورنرہ مکہ اور خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے مشیر شہزادہ خالد الفیصل اور ان کے نائب شہزادہ بدر بن سلطان بن عبد العزیز اور جدہ کے گورنر شہزادہ مشعل بن ماجد کو سلیمانیہ ریلوے اسٹیشن آمد پر وہاں ہونے والی آتش زدگی اور نقصان کے بارے میں بریفنگ دی۔

خیال رہے کہ گذشتہ اتوار کو 12 بج کر پانچ منٹ پر جدہ کے سلیمانیہ اسٹیشن پر آتش زدگی کے بعد فائر الارم سسٹم چلنے کے ساتھ ہی اس اسٹیشن کو مسافروں اور عملے سے فوری طور پر خالی کرا لیا گیا تھا۔ ابتدائی انتباہی نظام نے نے وہاں پرموجود عملے کی حفاظت میں مدد فراہم کی تھی۔