.

الحدیدہ : حوثیوں کی دراندازی کی کوشش یمنی فورسز کے ہاتھوں پسپا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں مشترکہ سرکاری فورسز نے جمعرات کے روز الحدیدہ صوبے کے ضلع التحیتا کے جنوب میں واقع پہاڑی علاقوں میں حوثی ملیشیا کی دراندازی کی نئی کوشش ناکام بنا دیا۔ اس دوران ضلع کے ساحلی علاقے الفازہ کو شدید گولہ باری کا نشانہ بنایا گیا۔

زمینی عسکری ذرائع کا کہنا ہے کہ مشترکہ فورسز دراندازی کی کوشش کرنے والے حوثی عناصر کے ساتھ پوری طاقت کے ساتھ نمٹیں اور ان کو پسپا کر دیا۔

ذرائع نے باور کرایا کہ مشترکہ فورسز اور حوثی ملیشیا کے عناصر کے درمیان مختلف نوعیت کے بھاری اور درمیانے ہتھیاروں کے ساتھ شدید جھڑپیں ہوئیں۔ اس دوران باغیوں کو بھاری جانی اور مادی نقصان اٹھانا پڑا جب کہ باقی ماندہ عناصر فرار ہو گئے۔ یہ بات المعالقہ بریگیڈز کے میڈیا سینٹر کی جانب سے جاری بیان میں بتائی گئی۔

حوثی ملیشیا نے التحیتا ضلع میں واقع سحلی علاقے الفازہ میں مشترکہ یمنی فورسز کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانے اور ان پر گولہ باری کا سلسلہ جاری رکھا۔ ذرائع کے مطابق باغیوں نے توپ کے ہاؤزر گولے اور B10 گرینیڈز داغے اور اس کے علاوہ شدید فائرنگ بھی ہوئی۔

اس سے قبل حوثی ملیشیا نے التحیتا شہر اور ضلع کے شمالی اور مشرقی علاقوں میں یمنی فورسز کے ٹھکانوں کو توپوں اور بھاری ہتھیاروں کے ذریعے شدید انداز میں نشانہ بنایا۔

المعالقہ بریگیڈز کے میڈیا مرکز کی جانب سے جاری بیان میں ایران نواز حوثی ملیشیا پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ اس نے فائر بندی کے لیے اقوام متحدہ کی جنگ بندی کی شقوں پر عمل درامد مسترد کر دیا ہے۔ حوثی باغیوں نے گذشتہ برس کے اواخر میں نافذ العمل ہونے والی جنگ بندی کے بعد سے الحدیدہ صوبے کے علاقوں اور اضلاع کو مسلسل حملوں کا نشانہ بنایا ہے۔