.

سعودی عرب کا سوڈان کوعالمی پابندیوں سے نکالنے کی مساعی جاری رکھنے کا عزم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب نے کہا ہے کہ برادر ملک سوڈان پر دہشت گردی کی سرپرستی کے الزامات کے تحت عایدکی گئی عالمی پابندیاں ختم کرانے کے لیے اپنا کردار ادا کرتا رہےگا۔

وزارت خارجہ نے اتوار کے روز کہا کہ وہ سوڈان کو امریکی دہشت گردی کے ریاستی سرپرستی کی فہرست سے نکالنے کے لیے کام کر رہا ہے۔

وزارت خارجہ کے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر ایک بیان میں کہا کہ ریاض سوڈان میں سرمایہ کاری کے متعدد منصوبے قائم کرنے اور موجودہ منصوبوں کو بہتر بنانے کے لیے کام کر رہا ہے۔

اتوار کے روز شاہ سلمان بن عبد العزیز نے سوڈان کی خودمختار کونسل کے چیئرمین عبد الفتاح البرہان اور وزیر اعظم عبد اللہ حمدوک سے ملاقات کی تھی۔ یہ ان کا بیرون ملک کا پہلا دورہ ہے۔

سعودی پریس ایجنسی 'ایس پی اے' کے مطابق شاہ سلمان نے جنرل البرہان اور حمدوک کے ساتھ باضابطہ بات چیت کی۔ مذاکرات کے آغاز پر خادم الحرمین الشریفین سوڈان کی خوشحالی، ترقی اور استحکام کی خواہش کا اظہار کیا۔

جنرل عبدالفتاح البرہان نے جواب میں سوڈان کی جانب سے سعودی عرب کی مدد وحمایت اور نیک خواہشات کو سراہا ہے۔سعودی وزارت خارجہ نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ ’’سعودی عرب سوڈان کا نام امریکا کی دہشت گردی کو اسپانسر کرنے والی ریاستوں کی فہرست سے حذف کرانے کے لیے کام کررہا ہے۔اس کے علاوہ وہ سوڈان میں سرمایہ کاری کے منصوبے اور موجودہ منصوبوں میں بہتری کے لیے کام کرے گا۔‘‘

دوسری جانب سوڈان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ وہ امریکا کی دہشت گردی کی اسپانسر ریاستوں کی فہرست سے اپنا نام ہٹوانے کے لیے بین الاقوامی فورموں پر سعودی عرب کی مدد کا طالب ہے۔اس کے علاوہ اس کو ملک میں سرمایہ کاری کا سازگار ماحول پیدا کرنے اور اپنے زرعی شعبے کی ترقی کے لیے بھی سعودی عرب کی مدد کی ضرورت ہے۔