.

ایس ڈی ایف کوبانی اور منبج کا کنٹرول شامی فوج کے حوالے کرنےکو تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شامی جمہوری فورسز (ایس ڈی ایف) نے اپنے زیر انتظام دو شہروں عین العرب (کوبانی) اور منبج کا کنٹرول آیندہ اڑتالیس گھنٹے میں شامی فوج کے حوالے کرنے سے اتفاق کیا ہے۔

برطانیہ میں قائم شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے اس سلسلے میں دونوں فورسز کے درمیان اتوار کو ایک سمجھوتا طے پانے کی اطلاع دی ہے۔برطانوی خبررساں ایجنسی رائیٹرز نے بھی لبنانی نشریاتی ادارے المیادین کے حوالے سے اس اطلاع کی تصدیق کی ہے۔

اس نے یہ اطلاع دی ہے کہ شامی فوج آیندہ اڑتالیس گھنٹے میں کوبانی اوراس کے نزدیک واقع شہر منبج میں تعینات کردی جائے گی۔کوبانی پر شامی جمہوری فورسز اور منبج پر اس کی اتحادی فورسز کا کنٹرول ہے۔

یہ دونوں شہر شام کے شمال میں ترکی کی سرحد کے نزدیک واقع ہیں اور یہ بھی ترک فوج اور اس کے اتحادی شامی حزب اختلاف کے جنگجوؤں پر جیش الحر کے حملوں کی زد میں ہیں۔

رصدگاہ نے اتوار کو یہ بھی اطلاع دی ہے کہ شام کے شمال مشرقی علاقے میں ترک فوج کے حملوں میں مزید چھبیس شہری ہلاک ہوگئے ہیں۔ان میں دس افراد شہریوں اور صحافیوں کے گاڑیوں پر مشتمل ایک قافلے پر ترک فوج کے فضائی حملے میں مارے گئے ہیں۔

کردملیشیا کی قیادت میں شامی جمہوری فورسز نے ایک جوابی حملے کے بعد سرحدی شہر راس العین کا کنٹرول واپس لے لیا ہے۔شامی رصدگاہ کی اطلاع کے مطابق اس قصبے پر قبضے کے لیے لڑائی میں شامی جیش الحر کے سولہ جنگجو مارے گئے ہیں۔