.

شامی کیمپ سے داعش کے785غیرملکی جنگجو فرار :کرد انتظامیہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے شمالی علاقے میں کرد انتظامیہ کے زیرانتظام ایک کیمپ پر کرد فورسز کے حملے کے بعد داعش سے وابستہ 785غیرملکی جنگجو فرار ہوگئے ہیں۔

کردوں کے زیر قیادت انتظامیہ نے اتوار کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’شرپسندوں‘‘ نے کیمپ پر حملہ کیا تھا۔اس کے بعد داعش کے خاندانوں نے کیمپ کے محافظوں پر حملہ آور ہوگئے تھے اور اس کے دروازے کھول دیے تھے۔اس انتظامیہ نے ترکی کی اتحادی شامی حزب اختلاف کی فورسز کو شرپسند قرار دیا ہے۔

شامی جمہوری فورسز (ایس ڈی ایف) نے الگ سے ایک بیان میں کہا ہے کہ شمالی شام میں ترک فوج کے حملے میں گذشتہ دو روز میں اس کے مزید اکتیس جنگجو مارے گئے ہیں۔ترک فوج کی گذشتہ بدھ سے جاری کارروائی میں ایس ڈی ایف نے اپنے چھہتر جنگجوؤں کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔

دریں اثناء فرانسیسی حکومت کے ترجمان سبتھ این دیائی نے ایک بیان میں داعش کے انتہاپسندوں کے کیمپ سے فرار پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ اسی وجہ سے ہم یہ چاہتے ہیں کہ ترکی جلد سے جلد شام میں جاری اپنی فوجی مداخلت کو ختم کردے۔