.

سعودی عرب کی البغدادی کے خلاف امریکی فوجی آپریشن کی تحسین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی وزارت خارجہ کے ایک سرکاری ذریعے نے بتایا کہ سعودی حکومت نے دہشت گرد تنظیم 'داعش' کے سربراہ ابو بکر البغدادی کو شکست دینے کی کوششوں کی کامیابی پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ تحسین کے مستحق ہیں۔ انہوں نے البغدادی کو اس کے بدترین انجام سے دوچار کرنے کا وعدہ پورا کردکھایا ہے۔

ذرائع نے مزید کہا کہ سعودی حکومت اس خطرناک دہشت گرد تنظیم کے جنگجوئوں کا تعاقب جاری رکھنے کی امریکی انتظامیہ کی عظیم کاوشوں کو سراہتی ہے۔ اس گروپ نے پوری دنیا میں اسلام اور مسلمانوں کے تشخص کو نقصان پہنچایا۔ اور اسلام کا اصل چہرہ مسخ کیا۔ یہ گروپ سعودی عرب سمیت متعدد ممالک میں بنیادی انسانی اقدار کے منافی مظالم اور جرائم کے ارتکاب کا مرتکب ہوا ہے۔

ذرائع نے اس بات پر زور دیا کہ سعودی حکومت دہشت گردی کا مقابلہ کرنے ، اس کے ذرائع آ مدن بند کرنے اور اس کے خطرناک مجرمانہ نظریہ کا مقابلہ کرنے کے لیے اپنے اتحادیوں خصوصا امریکا کے ساتھ مل کر کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے۔

خیال رہے کہ اتوار کے روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا تھا کہ شام کے صوبہ ادلب کے دیہی علاقے میں واقع بریشا گاؤں میں تنہا امریکی خصوصی دستوں کے ذریعہ کیے گئے ایک انتہائی خطرناک آپریشن میں ابو بکر البغدادی اور ان کے ساتھیوں کی بڑی تعداد کو ہلاک کیا گیا ہے۔ صدر ٹرمپ کا کہنا ہے کہ 'ڈی این اے' ٹیسٹ کے نتائج سے معلوم ہوا ہے کہ بغدادی ہلاک ہو چکا ہے۔

ٹرمپ نے وضاحت کی کہ بغدادی کو اپنے تین بچوں کے ساتھ شمال مغربی شام میں مارا گیا تھا۔ البغدادی نے خود ہی اپنی خود کش جیکٹ سے خود کو ہلاک کردیا تھا۔