.

سعودی عرب: فیوچر انویسٹمنٹ اجلاس میں 20 ارب ڈالر کے 26 سمجھوتے

سال 2019ء کی تیسری سہ ماہی میں 809 سرمایہ کاری پرمٹ جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی میزبانی میں تیسرے سالانہ فیوچر آف انویسٹمنٹ اینشی ایٹو اجلاس کے اختتام پر 20 ارب ڈالر مالیت کے 26 سمجھوتوں کی منظوری دی گئی ہے۔

سعودی عرب کی جنرل انویسٹمنٹ اتھارٹی کے زیراہتمام منگل سے کل جمعرات 31 اکتوبر تک جاری رہنے والی عالمی سرمایہ کاری کانفرنس میں 300 عالمی وفود اور بین الاقوامی شخصیات نے شرکت کی۔ 20 ارب ڈالر سے زیادہ کی مالیت کے 26 معاہدوں کے اعلان کے ساتھ فیوچر انویسٹمنٹ انیشی ایٹو کی تین روزہ کانفرنس کا اختتام کیا گیا۔

"سعودی سرمایہ کاری" پلیٹ فارم میں ہونے والے اجلاس کے دوران سعودی عرب کی رئیل اسٹیٹ کمپنی اور امریکا کی ٹرپل فائیو کےدرمیان دو سمجھوتوں کی منظوری دی گئی۔ اسی طرح سعودی عرب کی سمات اور امریکا کی سپر نکلر کے درمیان بھی معاہدوں کی منظوری دی گئی۔

دونوں کمپنیوں نے سوشیل نیٹ ورکنگ پلیٹ فارمز کے نظم و نسق کے شعبوں میں تجربات کا تبادلہ، ڈیجیٹل سروسز میں صارفین کوسہولیات کی فراہمی پر اتفاق کیا گیا۔

ٹرپل فائیو اور سعودی رئیل اسٹیٹ کمپنی کے مابین دوسرے معاہدے میں ریاض کے الودیان پروجیکٹ میں سب سے بڑا ملٹی ایکٹیویٹی تفریحی شاپنگ سینٹر قائم کرنے کے لئے بین الاقوامی تعاون کا اعلان کیا گیا۔ اس منصوبے میں شاپنگ مالز، واٹر پارکس، تفریحی اور کھیلوں کے مراکز، مہمان خانے اور دیگر ملٹی سروس سینٹرز شامل ہوں گے۔

سعودی عرب کی سرمایہ کاری اتھارٹی نے اس سے قبل 24 معاہدوں پر دستخط کرنے کا اعلان کیا تھا جو مستقبل میں سرمایہ کاری اقدام کے فریم ورک کے تحت روبہ عمل ہوں گے۔ معاہدوں میں دوا سازی کے شعبے، لاجسٹکس، پیٹروکیمیکلز، ٹکنالوجی، کاروباری اور سائنس تحقیقات اسٹریٹجک شعبوں، خاص طور پر توانائی اور پانی کے شعبے میں بھی بہت سی سرمایہ کاری کی سرگرمیاں شامل تھیں۔

رواں سال کی تیسری سہ ماہی کے اختتام تک غیر ملکی سرمایہ کاری کے لائسنسوں کی تعداد 809 تھی جس میں مقامی سرمایہ کاروں کے ساتھ مشترکہ منصوبے شامل ہیں۔ رواں سال گذشتہ تین سہ ماہیوں کے دوران مجموعی طور پر 809 سرمایہ کاری کے لائسنس جاری کیے گئے۔ سال 2010ء کے بعد یہ سرمایہ کاری لائسنس کی ایک سال میں سب سے بڑی تعداد ہے۔